سکولوں میں ’ننھی بدمعاشی‘بچے برباد کرتی ہے:برطانوی سٹڈی

سکولوں میں ’ننھی بدمعاشی‘بچے برباد کرتی ہے:برطانوی سٹڈی
سکولوں میں ’ننھی بدمعاشی‘بچے برباد کرتی ہے:برطانوی سٹڈی

  

لندن ( مانیٹرنگ ڈیسک) دوران تعلیم ساتھی شرارتی بچوں کی چھیڑچھاڑ اور ’بدمعاشی‘تعلیمی معیار اور طالبعلموں پر بڑی  بُری طرح اثرنداز ہوتی ہے ۔ یہ نتیجہ برطانیہ میں ایک تفصیلی جائزے کے بعد اخذ کیا گیا ہے جس میں چھتیس ہزار بچوں کو شامل کیا گیا۔ بی بی سی کے مطابق سکول جانے والے ایک چوتھائی بچوں نے کہا کہ شرارتی بچوں کے ڈرانے دھمکانے کی وجہ سے ان کی پڑھائی پر بُرا اثر پڑا اوران کے گریڈ کم ہوئے ہیں ۔رپورٹ کے مطابق شرارتی بچوں کا شکار ہونے والوں میں سے ہر تیسرے  بچے نے بے بسی اور افسردگی میں اپنے آپ کو نقصان پہنچانے اور بعض نے تو خود کشی کی بھی کوشش کی ۔ تراسی فیصد بچوں نے کہا کہ اس رویے سے ان کے اعتماد میں بھی کمی واقع ہوئی ہے ، رپورٹ میں یہ رویے ختم کرنے کیلئے اساتذہ کی تربیت اور بہتر ماحول فراہم کرنے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -