حامد میر پر حملہ،حکومت جوڈیشل کمیشن کیلئے سپریم کورٹ کو درخواست،الزامات کیخلاف قانونی چارہ جوئی کرینگے،ترجمان پاک فوج

حامد میر پر حملہ،حکومت جوڈیشل کمیشن کیلئے سپریم کورٹ کو درخواست،الزامات ...

  

                                                           اسلام آباد( آن لائن +اے این این) وزیر اعظم نواز شریف نے معروف صحافی حامد میر پر قاتلانہ حملے کی تحقیقات کےلئے 3رکنی عدالتی کمیشن کے قیام کا فیصلہ کر لیا، کمیشن کی تشکیل کےلئے چیف جسٹس سپریم کورٹ کوحکومت کی جانب سے خط لکھ دیا گیا ہے جس میں عدالتی کمیشن بنانے کیلئے دوخواست کی گئی ہے۔یہ درخواست سیکرٹری داخلہ کی جانب سے چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کے نام لکھے گئے خط میں کی گئی ہے۔ چیف جسٹس سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ حامد میر پر حملے کی عدالتی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن کے قیام کیلئے اعلیٰ عدلیہ کے تین ارکان کو نامزد کردیں۔ جوڈیشل کمیشن واقعہ کی تحقیقات کرکے تین ہفتوں میں رپورٹ پیش کرے گا۔ عدالتی کمیشن واقعہ کے حقائق اور ذمہ داران کا تعین کرے گا۔وفاقی حکومت کی جانب سے ملزمان کی اطلاع دینے والوں کےلئے1کروڑ روپے انعام کا اعلان،نام صیغہ راز میں رکھا جائے گا ۔ترجمان وزیراعظم ہاﺅس کے مطابق وزیراعظم نوازشریف کی زیر صدارت سیاسی و حکومتی معاونین کا اجلاس ہوا جس میں سینئر صحافی حامد میر پر حملے بارے تبادلہ خیال کیا گیا ، اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ حامد میر پر حملے کی تحقیقات کےلئے تین رکنی عدالتی کمیشن بنایا جائے گا ، وفاقی حکومت کمیشن کے قیام کے لئے چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس تصدق حسین جیلانی کو درخواست دے گی ۔ترجمان وزیراعظم ہاﺅس کے مطابق حامد میر پر حملے کرنے والے ملزمان کے بارے میں معلومات دینے والوں کو ایک کروڑ روپے کا انعام دیا جائیگا اوراطلاع دینے والے کانام صیغہ رازمیں رکھاجائے گا۔

مزید :

صفحہ اول -