سینیٹ اجلاس: معمول کی کارروائی معطل، حامد میر پر حملے پر بحث، واقعات کی روک تھام کیلئے پانچ رکنی کمیٹی بنانے کا فیصلہ

سینیٹ اجلاس: معمول کی کارروائی معطل، حامد میر پر حملے پر بحث، واقعات کی روک ...
سینیٹ اجلاس: معمول کی کارروائی معطل، حامد میر پر حملے پر بحث، واقعات کی روک تھام کیلئے پانچ رکنی کمیٹی بنانے کا فیصلہ
کیپشن: SenateExterior

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) قائد ایوان اور قائد حزب اختلاف نے صحافیوں کا سینیٹ سے بائیکاٹ ختم کرا دیا ہے، قائد ایوان راجہ ظفر الحق نے کہا ہے کہ ایوان حامد میر پر حملے کی مذمت کرتا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سینئر صحافی حامد میر پر قاتلانہ حملے کے خلاف صحافیوں نے سینیٹ کی کارروائی کا بائیکاٹ کر دیا جس کے بعد قائد ایوان اور قائد حزب اختلاف نے صحافیوں کا بائیکاٹ ختم کرایا۔ اس موقع پر راجہ ظفر الحق کا کہنا تھا کہ ایوان حامد میر پرقاتلانہ حملے کی مذمت کرتا ہے، صحافیوں کو درپیش خطرات سے آگاہ ہیں اور ان کے تحفظ کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔ سینیٹر اعتزاز احسن نے واضح کیا کہ آج کے اجلاس کی معمول کی کارروائی معطل کرتے ہوئے حامد میر پر قاتلانہ حملے تک محدود کر دی گئی ہے، صحافیوں کے تحفظ کیلئے قانون سازی کی جائے گی۔ اجلاس میں ایسے واقعات کی روک تھام کیلئے حکومتی اور اپوزیشن اراکین پر مشتمل پانچ رکنی مشترکہ کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کے سربراہ رضا ربانی ہوں گے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق کمیٹی کے دیگر اراکین میں رفیق رجوانہ، سعید غنی، مظفر حسین شاہ اور افراسیاب خٹک شامل ہوں گے۔

مزید :

اسلام آباد -