اگلے مالی سال کے دوران 3 ہزار بائیو گیس یونٹس لگانے کی پلاننگ مکمل

اگلے مالی سال کے دوران 3 ہزار بائیو گیس یونٹس لگانے کی پلاننگ مکمل

 اسلام آباد(آن لائن) پاکستان کونسل آف رینیوایبل انرجی ٹیکنالوجیز(پیکرٹ)کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹرسہیل زکی فاروقی نے کہا ہے کہ آئندہ مالی سال کے دوران تین ہزار بائیو گیس یونٹس لگانے کی پلاننگ مکمل کرلی ہے جس کے تحت پچاس فیصد سبسڈی دی جائیگی، توانائی کے بحران کے تناظر میں آبپاشی کیلئے سولر پینل پرٹیوب ویل چلانے کیلئے تمام تران پٹ دیدیا گیا ہے جس کا حتمی فیصلہ آئندہ چند ہفتوں میں کرلیا جائیگا۔ میڈیا سے گفتگو دوران ڈی جی نے بتایاکہ ملک بھرمیں توانائی کے بحران کومرحلہ وار حل کرنے کیلئے مختلف منصوبوں کے ذریعے شارٹ ٹرم اورلانگ ٹرم پلاننگ کررکھی ہے جس کے مطابق گلگت بلتستان، آزاد کشمیر،خیبرپختونخواہ میں مائیکروہائیڈل پلانٹس کو شارٹ ٹرم پالیسی کے تحت 2011 سے 2015تک پانچ میگاواٹ (25 ہزارگھروں کو) کوروشن کرنے کی پلاننگ کی گئی تھی۔ رپورٹ کے مطابق485 یونٹس 8 میگاواٹ بجلی فراہم کررہے ہیں جو 70 ہزار گھروں کو بجلی فراہم کررہے ہیں۔ اور لانگ ٹرم پلاننگ کے ذریعے یہ ہدف 2020 تک بیس میگاواٹ بجلی پیداکی جائیگی جوایک لاکھ گھروں کوبجلی فراہم کریگی۔

مزید : کامرس