تیزاب سے متاثرہ خاتون کا کمرہ عدالت میں چہرہ دکھانے سے انکار

تیزاب سے متاثرہ خاتون کا کمرہ عدالت میں چہرہ دکھانے سے انکار

 لاہور (نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سابق منگیتر کے چہرے پر تیزاب پھینکنے والے ملزم کی درخواست ضمانت میں لیڈی پولیس افسر کو لڑکی کا بیان ریکارڈ اور رپورٹ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس منظور احمد ملک لڑکی ارم صادق پر تیزاب پھینکنے والے سابقہ منگیتر محمد راشد درخواست ضمانت پر سماعت کی، عدالتی حکم پر متاثرہ لڑکی اور ایس ایس پی انویسٹی گیشن رانا ایاز سلیم بھی عدالت میں پیش ہوئے، لڑکی کی شناخت کے لئے عدالت نے اسے چہرے سے نقاب ہٹانے کا کہا تا ہم لڑکی نے کمرہ عدالت میں اپنا تیزاب سے متاثرہ چہرہ دکھانے سے انکار کردیا جس پر عدالت نے ایس ایس پی انویسٹی گیشن رانا ایاز سلیم کو حکم دیا کہ لڑکی کی شناخت اور اس کا بیان ریکارڈ کرنے کے لئے لیڈی پولیس آفیسر تعینات کی جائے اور کیس کی تفتیش مکمل کر کے رپورٹ 28اپریل تک عدالت میں جمع کرائی جائے۔

مزید : علاقائی