سعودی عرب میں غیر ملکیوں کے سکولوں کے لئے حکومت کا اہم فیصلہ

سعودی عرب میں غیر ملکیوں کے سکولوں کے لئے حکومت کا اہم فیصلہ
سعودی عرب میں غیر ملکیوں کے سکولوں کے لئے حکومت کا اہم فیصلہ

  

جدہ (محمد اکرم اسد) سعودی مجلس شوریٰ نے سفارتخانوں کو کمیونٹی سکولوں کیلئے پلاٹ اور عمارت خریدنے کی منظوری دے دی۔ شوریٰ کے معاون صدر ڈاکٹر یحییٰ العمعان نے شوریٰ کے اجلاس کے بعد مذکورہ منظوری کی تفصیلات بتاتے ہوئے واضح کیا کہ 4صفر1418ھ کو سعودی کابینہ سے جاری ہونے والے غیر ملکی سکولوں کے لائحہ عمل کی دفعہ 9میں ترمیم منظور کی گئی ہے۔ منظوری سے قبل شوریٰ کی تعلیمی و علمی ریسرچ کمیٹی نے ترمیم کی بابت ارکان شوریٰ کے افکار و خیالات سنے تھے اور پھر اسے مجلس شوریٰ کے قانون کی دفعہ 17 کے بموجب جائزہ کیلئے شوریٰ کو بھیج دیا گیا تھا۔ العمعان کے مطابق ترمیم کے بعد دفعہ 9 اس طرح پڑھی جائیگی کہ کمیونٹی سکول قائم کرنے کیلئے سفارت خانہ پلاٹ یا عمارت خریدنے کی درخواست وزارت خارجہ سے کرے گا۔
 پرائیویٹ ایجوکیشنل کونسل جائزہ لیگی، منطوری یا نامنظوری کا فیصلہ ”جیسا کروگے ویسا ہی کیا جائے گا“ کے اصول کے مطابق ہوگا۔ اس سلسلے میں لائحہ عمل کے مندرجات کو مدنظر رکھاجائیگا، کمیونٹی سکول کے لئے خریدی جانیوالی عمارت یا پلاٹ سرکاری نہ ہو اور نہ ہی کسی تعلیمی ادارے کے لئے مختص ہو۔ پلاٹ یا عمارت کی رجسٹریشن منظوری کے بعد سفارتخانے کے نام سے ہوگی۔ اس عمارت یا پلاٹ کو اس مقصد کے علاوہ کسی اور غرض کیلئے استعمال نہیں کیا جاسکتا جس عنوان سے اسے خریدنے کی اجازت حاصل کی گئی ہوگی۔ پرائیویٹ ایجوکیشنل کونسل مطلوبہ شرائط مکمل کرنے کی تاریخ سے 30 روز کے اندر اندر سفارتخانے کی درخواست نمٹانے کی پابند ہوگی۔ کونسل حتمی منظوری کیلئے دفتر خارجہ کے توسط سے کابینہ کو درخواست پیش کرے گی۔

مزید : بین الاقوامی