الیکشن کمیشن کراچی میں انتخابی اصلاحات نہیں کرنا چاہتا : حافظ نعیم الرحمان

الیکشن کمیشن کراچی میں انتخابی اصلاحات نہیں کرنا چاہتا : حافظ نعیم الرحمان
الیکشن کمیشن کراچی میں انتخابی اصلاحات نہیں کرنا چاہتا : حافظ نعیم الرحمان

  

کراچی ( مانیٹرنگ ڈیسک ) جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمان نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے ان کا کوئی مطالبہ بھی منظور نہیں کیا گیا اور ایسے لگ رہا ہے جیسے الیکشن کمیشن کراچی میں انتخابی اصلاحات کرنا ہی نہیں چاہتی ۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حافظ نعیم الرحمان کا کہنا تھا کہ جماعت اسلامی کا مقابلہ سیاسی جماعت سے نہیں بلکہ ایک مافیا کے ساتھ ہے ۔انہوں نے بتایا کہ یہ ایسی مافیا ہے کہ جس نے کراچی کے ہر ادارے میں اپنے کارکنان کا جال بچھا رکھا ہے ۔ جماعت اسلامی کے رہنماءنے الزام لگایا ہے کہ ایم کیو ایم کے رہنماءبابر غوری نے راتوں رات اپنے کارکنان کو کے پی ٹی میں ملازمت دلوائی ہے اور انہیں ریٹرنگ افسر بھی بنا دیا گیا ہے ۔

جماعت اسلامی سے متعلق ایم کیو ایم کا موقف پڑھنے کے لیے کلک کریں

حافظ نعیم الرحمان کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم دھاندلی کے ذریعے الیکشن جیتنا چاہتی ہے جبکہ ان کے سیکٹر آفس سے جعلی شناختی کارڈ سے بھری بوریاں بھی برآمد ہوئی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے رہنماءبابر غوری کی کرتوت سے کون واقف نہیں ہے جنہوں نے نارتھ کراچی میں پلاٹوں پر قبضہ کیا ہے اور اب این اے 246 کے الیکشن میں دھاندلی کی تیاری کر رہے ہیں۔ جماعت اسلامی کے رہنماءنے عوام سے درخواست کی ہے کہ انہیں اللہ پر بھروسہ ہے اس لیے عوام اپنی رائے کا بھرپور استعمال کریں اور اسے تقسیم نہ ہونے دیں ۔

مزید : کراچی /اہم خبریں