سینما گھروں پر 20فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس کی بحالی کی سرکاری اپیل مسترد

سینما گھروں پر 20فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس کی بحالی کی سرکاری اپیل مسترد
سینما گھروں پر 20فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس کی بحالی کی سرکاری اپیل مسترد

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہورہائیکورٹ نے شہربھر کے سینما گھروں پر20 فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس کی بحالی کے لئے حکومتی اپیل مسترد کردی ہے ۔لاہور ہائی کورٹ کے سنگل بنچ نے 20فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس کے نفاذ کو کالعدم کردیا تھا جس کے خلاف حکومت نے یہ انٹرا کورٹ اپیل دائر کی تھی ۔جسٹس عائشہ اے ملک کی سربراہی میں دورکنی بنچ نے سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کی وساطت سے دائر اس انٹراکورٹ اپیل کی سماعت کی۔ پنجاب حکومت کی طرف سے اسسٹنٹ ایڈوکیٹ جنرل پنجاب نے موقف اختیارکیا کہ حکومت نے سینماﺅںپر 20 فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس نافذ کیا تا ہم ہائیکورٹ کے سنگل بنچ نے ٹیکس کو غیرقانونی قراردیتے ہوئے کالعدم کر دیا، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ انٹرٹینمنٹ ٹیکس کا نفاذحکومتی پالیسی کا حصہ ہے جسے کالعدم کرنا عدالت کا اختیارنہیں ہے ،سنگل بنچ کے فیصلے کو کالعدم قراردیا جائے۔ مبارک ، میٹروپول، گلستان، کیپٹل، نگینہ اور پلازہ سینما سمیت دیگر سینماگھروں کے وکلاءنے موقف اختیارکیا کہ سینما پہلے ہی مالی بحران کا شکارہیں،انٹرٹینمنٹ ٹیکس کے نفاذ سے ان کے کاروبار تباہ ہوکررہ جائیں گے ،سنگل بنچ کے فیصلے کو برقراررکھا جائے۔ ڈویژن بنچ نے فریقین کے تفصیلی دلائل سننے بعد سینما گھروں پر20 فیصد انٹرٹینمنٹ ٹیکس کے نفاذ کے لئے حکومتی اپیل مسترد کردی ہے ۔

مزید : لاہور