پنجاب یونیورسٹی سے گرفتار کالعدم تنظیم کا صوبائی صدر وائس چانسلر کی سابقہ بیوی کا بھتیجا نکلا

پنجاب یونیورسٹی سے گرفتار کالعدم تنظیم کا صوبائی صدر وائس چانسلر کی سابقہ ...
پنجاب یونیورسٹی سے گرفتار کالعدم تنظیم کا صوبائی صدر وائس چانسلر کی سابقہ بیوی کا بھتیجا نکلا

  

لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک ) پنجاب یونیورسٹی کی کنٹین سے گرفتار ہونے والے کالعدم تنظیم کے صوبائی سربراہ کے بارے میں اہم انکشافات سے پردہ اٹھایا گیا ہے ۔ نجی ٹی وی چینل اے آر وائے کے مطابق بتایا گیا ہے کہ گزشتہ روز ممنوعہ لٹریچر تقسیم کرنے کے الزام میں کالعدم تنظیم حزب التحریر پنجاب کے صوبائی صدر شہریار کو گرفتار کیا گیا تھا ۔ نجی ٹی وی چینل کا کہنا ہے کہ گرفتار ملزم شہریار وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی ڈاکٹر مجاہد کامران کی سابقہ بیوی کا بھتیجا ہے اور اسی رشتہ کی نسبت سے ملزم شہریار کا یونیورسٹی میں کافی اثر و رسوخ تھا۔اے آر وائے کے ذرائع کے مطابق بتایا گیا ہے کہ ملزم شہریار کو وائس چانسلر ہاﺅس میں ٹھہرایا گیا تھا اور اس کی وجہ بھی ڈاکٹر مجاہد کامران کی سابقہ بیوی ہی ہیں جنہوں نے اسے وائس چانسلر ہاﺅس میں ٹھہرانے کا انتظام کیا تھا۔یاد رہے گزشتہ روز ملزم شہریار کو ہاسٹل 14 اور 15 کی کنٹین سے گرفتار کیا گیا تھا اور اس پر ممنوعہ لٹریچر تقسیم کرنے اور کالعدم تنظیم میں طلباءکو دعوت دینے کے الزام میں پولیس نے حراست میں لیا تھا ۔

ملزم شہریار سے متعلق مکمل معلومات جاننے کے لیے کلک کریں

مزید : لاہور