تیل  مفت سے بھی سستا تو ہوگیا لیکن خریدا نہیں جاسکے گا لیکن کیوں؟ حیران کن وجہ سامنے آگئی

تیل  مفت سے بھی سستا تو ہوگیا لیکن خریدا نہیں جاسکے گا لیکن کیوں؟ حیران کن ...
تیل  مفت سے بھی سستا تو ہوگیا لیکن خریدا نہیں جاسکے گا لیکن کیوں؟ حیران کن وجہ سامنے آگئی

  

نیو یارک (ڈیلی پاکستان آن لائن) عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتیں مفت سے بھی کم یعنی منفی تک گرچکی ہیں لیکن یہ تیل خریدا نہیں جاسکتا۔

پیر کے روز کینیڈین  تیل کی قیمت  منفی صفر اعشاریہ 15 ڈالر تک گرگئی جبکہ امریکن ڈبلیو ٹی آئی کروڈ آئل ڈیڑھ ڈالر فی بیرل ہوگیا تھا لیکن  یہ تیل خریدا نہیں جاسکے گا۔ اس کی وجہ بھی انتہائی دلچسپ سامنے آئی ہے۔

بی بی سی مڈل ایسٹ کے نمائندے سمیر ہاشمی کے مطابق تیل کی قیمتوں میں کمی مئی کے مہینے کیلئے ہوئی ہے۔ یعنی جو تیل خریدا جائے گا وہ مئی میں سپلائی کیا جائے گا لیکن تیل کی کھپت کم ہونے کی وجہ سے کوئی بھی ملک یا کمپنی معاہدوں میں تجدید نہیں کر رہی۔ پیر کا روز وہ آخری دن تھا جو مئی میں تیل کی سپلائی  کے نئے معاہدے یا معاہدوں کی تجدید کیلئے آخری دن تھا۔

سمیر ہاشمی کے مطابق جن ممالک نے مئی کے مہینے کیلئے تیل خریدنا تھا انہوں نے پہلے ہی آرڈر بک کرادیے ہیں اور کسی نے بھی معاہدوں کی تجدید نہیں کی جس کی وجہ سے تیل کی قیمتیں منفی میں چلی گئیں۔ اگر کوئی ملک یا ادارہ جون کے مہینے کیلئے ڈبلیو ٹی آئی کروڈ آئل خریدنے کا معاہدہ کرے گا تو اس کیلئے یہ قیمت 20 ڈالر فی بیرل ہوگی۔

مزید :

بزنس -