چین، ٹائپ 2ذیا بیطس کے علاج کیلئے روایتی چینی طب کی نئی دوا کی منظوری

چین، ٹائپ 2ذیا بیطس کے علاج کیلئے روایتی چینی طب کی نئی دوا کی منظوری

  

 بیجنگ (شِنہوا)چین نے روایتی چینی طب سے حاصل کی جانے والی انسداد ذیابیطس کی ایک نئی دوا کو مارکیٹ تک رسائی دے دی ہے۔یہ بات نیشنل میڈیکل پروڈکٹس ایڈمنسٹریشن نے بتائی ہے۔ انسداد ذیابیطس کی دوائی، ملبری ٹِوگ الکالائڈز ٹیبلٹ، شہتوت کی ٹہنی سے نکالی جاتی ہے جسے ٹائپ 2 ذیابیطس کے علاج کے لئے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ گذشتہ 10 سالوں میں ذیابیطس کے علاج لئے یہ چین کی پہلی منظور شدہ روایتی طب کی دوائی ہے۔ بیجنگ وی ہینڈ بائیو فارماسیوٹیکل کمپنی لمیٹڈ کو مارکیٹ میں اس دوائی کی مارکیٹنگ میڈیسن کے حقوق حاصل ہیں۔اس دوائی کے کلینکل ٹرائلز کا دوسرا اورتیسرا مرحلہ پیکنگ یونین میڈیکل کالج اسپتال کی سربراہی میں انجام دیا گیا ہے اور اس کے نتائج سے معلوم ہوا کہ اس دوائی نے ذیابیطس کے مریضوں میں ہیموگلوبن اے ون سی(ایچ بی اے 1سی) کی سطح کو موثر طور پر کم کیا جو ذیابیطس کے ٹائپ ٹو مریضوں میں ذیابیطس کو کنٹرول کرنے کا ایک اہم قدم ہے۔

مزید :

علاقائی -