بلڈ ڈونیشن کیمپ

  بلڈ ڈونیشن کیمپ

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)ڈولفن فورس اور سندس فاؤنڈیشن کے باہمی اشتراک سے ڈولفن ہیڈکوارٹرز والٹن میں بلڈ ڈونیشن کیمپ لگایا گیا۔ڈی آئی جی آپریشنز رائے بابر سعید، اینکر پرسن سہیل وڑائچ، ایس پی ڈولفن سکواڈ اینڈ اینٹی رائٹ فورس عائشہ بٹ، سند فاؤنڈیشن کے ڈاکٹرز، انتظامیہ اور پولیس افسران سماجی شخصیات نے شرکت کی۔

بلڈ ڈونیشن کیمپ میں ڈولفن سکواڈ، اینٹی رائٹ فورس ا ور پولیس ریسپانس یونٹ کے افسران اور جوانوں نے تھیلیسیمیا، ہیموفیلیا اور بلڈ کینسر کے مرض میں مبتلا بچوں کے لیے خون کے عطیات دیئے۔ڈولفن ہیڈ کوارٹرز آمد پر ڈی آئی جی آپریشنز رائے بابر سعید کو ڈولفن سکواڈ کے تازہ دم دستوں نے سلامی پیش کی۔میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشنز رائے بابر سعید نے کہا کہ جان لیوا امراض میں مبتلا بچوں کے لئے خون کے عطیات اکٹھے کرنے میں سندس فاؤنڈیشن جیسے فلاحی اداروں کے کردار کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی صورتحال اور جزوی لاک ڈاؤن کی وجہ سے بلڈ ڈونرزکی دستیابی میں مشکلات پیش آ رہی تھیں جس کی وجہ سے لاہور پولیس نے تھیلیسیمیا، ہیموفیلیا اور بلڈ کینسر کے ا مراض میں مبتلا بچوں کے لئے خون کے عطیات دینے کا بیڑا اٹھایا۔ ڈی آئی جی آپریشنز نے کہا کہ ایسے بچوں کی زندگی بچانے کے لئے معروف اینکر سہیل وڑائچ اور سندس فاؤنڈیشن جیسے اداروں کی خدمات قابل ستائش ہیں۔انہوں نے خون کا عطیا ء دینے والے ڈولفن سکواڈ، اینٹی رائٹ فورس ا ور پولیس ریسپانس یونٹ کے افسران اور جوانوں کو خراج تحسین پیش کیا۔ سند فاؤنڈیشن کے روح رواں سہیل وڑائچ نے کورونا وبا کی سنگین صورتحال کے باوجود خون کے امراض میں مبتلا بچوں کے لئے بلڈڈونیشن پر لاہور پولیس خاص طور پر ڈولفن سکواڈ، اینٹی رائٹ فورس ا ور پولیس ریسپانس یونٹ کے افسران اور جوانوں کا شکریہ ادا کیا۔ایس پی ڈولفن سکواڈ عائشہ بٹ نے بلڈ ڈونیشن کیمپ کے انتظامات اور خون کے عطیات دینے کے عمل کی نگرانی کی۔اے ایس پی ڈولفن ہیڈ کوارٹرز ڈاکٹر بشری جمیل بھی اس موقع پر موجود تھیں۔ ایس پی ڈولفن عائشہ بٹ نے کہا کہ ڈولفن اہلکارناصرف جرائم کی بیخ کنی بلکہ جذبہ انسانی خدمت سے بھی سرشار ہیں۔

مزید :

علاقائی -