صوابی، تحصیل رزڑ کے ٹرانسپورٹرز کا احتجاج، گاڑیاں بند، گھروں میں فاقے

  صوابی، تحصیل رزڑ کے ٹرانسپورٹرز کا احتجاج، گاڑیاں بند، گھروں میں فاقے

  

صوابی(بیورورپورٹ)تحصیل رزڑ کے ٹرانسپورٹرز کا مطالبات کی منظوری کے لئے احتجاج، ایک مہینے سے گاڑیاں بند ہے گھر میں فاقے پڑگئے ہیں 24اپریل تک ہمارے لئے کچھ ریلیف فراہم نہ کیا تو ڈپٹی کمشنر کے دفتر کے سامنے گاڑیوں اور خاندان سمیت خودسوزی کریں گے۔ صدر انجمن ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کا رزڑ کمپلیکس میں احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے صدر واقف خان نے کہا ہے کہ ایک مہینے سے گاڑیاں بند ہے گھر میں چھولے بجھ گئے ہیں گاڑی مالکان، ڈرائیور اور کنڈیکٹر بے روزگار ہیں ہمارے گاڑیوں کو یا تو اجازت دی جائے یا اس کے لئے کوئی متبادل بندوبست کیا جائے اگر 24 اپریل تک ہمارے مطالبات تسلیم نہیں کئے گئے تو ڈپٹی کمشنر صوابی کے آفس کے سامنے گاڑیوں اور خاندان سمیت خود سوزی کریں گے جسکی ذمہ داری متعلقہ حکام پر ہوگی۔ کورونا وائرس کے پھیلنے کے خطرے کے پیش نظر صوابی میں بھی جزوی لاک ڈاون کا سلسلہ جاری ہے لاک ڈاون سے ٹرانسپورٹرز بھی شدید متاثر ہوگئی ہیٹرانسپورٹرز کا کہنا ہے کہ ایک مہینے سے ہماری گاڑیاں بند کی گئی ہے جس کی وجہ سے ڈرایور کنڈیکٹر اور گاڑی کا مالک بے روزگار ہوگیا ہے جس کی وجہ سے گھروں میں چھولے ٹھنڈے ہوگئے ہیں گاڑی مالکان کا کہنا ہے کہ انتظامیہ ہماری کوئی فریاد سننے کو تیار نہیں ہے انھوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ یا تو ہماری گاڑیوں کو اجازت دی جائے یا ہمارے لئے کوئی متبادل پیکیج کا اعلان کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -