کرونا نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے،محمد ہمایوں خان

کرونا نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے،محمد ہمایوں خان

  

پشاور (سٹی رپورٹر)پاکستان پیپلز پارٹی خیبر پختونخوا کے صدر محمد ہمایوں خان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس نے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے اور اور اس کے نتیجے میں پیدا شدہ صورتحال کی وجہ سے پاکستان بھی بحرانی کیفیت سے دوچار ہے، اس وقت ملک میں قومی یکجہتی کی ضرورت ہے لیکن حکمران سیاست سے باز نہیں آرہے، پشاور پریس کلب میں پیپلز پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری فیصل کریم کنڈی ، سینیٹر روبینہ خالد اور گوہر انقلابی کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سندھ کی صوبائی حکومت نے فروری کے آخر میں کورونا کا پہلا کیس سامنے آنے کے بعد وایرس کے پھیلا و کو روکنے کے لئے اقدامات کا آغاز کیا،لیکن وفاقی حکومت صوبائی حکومت کے اقدامات کی تائید کرنے کے بجائے محض اپنی سیاست چمکانے کی غرض سے سندھ حکومت کے ساتھ محاذ آرائی کا سلسلہ شروع کر رکھی ہے،سندھ حکومت نے فور لاک ڈاون کی ضرورت محسوس کی جی تقلید پنجاب اور دیگر صوبوں نے بھی کی،سندھ حکومت کے موثر اقدامات کی عالمی ادارے بھی تعریف کرتے ہیں، لیکن مسلط وزیر اعظم عمران خان محض اپنی آنا اور ضد کی تسکین کی خاطر ملک میں لاک ڈاون کیمخالفت کرتا رہا جس کی وجہ سے کورونا وائرس کے پھیلاو کو موثر انداز میں نہیں روکا جاسکا۔ہمایوں خان نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو نے بھی واضح پیغام دیا تھا کہ یہ وقت سیاست کرنے کا نہیں بلکہ کورونہ کے خلاف متحدہونے کا ہے لیکن قوم نے اسپیکر کی طلب کردہ پارلیمانی رہنماوں کے اجلاس کے موقع پر مسلط وزیر اعظم کا رویہ دیکھا،انہوں نے مزید کہا کہ حکومت قومی اتحاد کو پارہ پارہ کرنے میں مگن ہے، انہوں نے مزید کہا حکومت کی ترجیحات کو دیکھ کر سر پکڑنا پڑتا ہے، جب انسانی جانوں کو بچانے کا وقت آیا تو حکومت کو کنسٹرکشن انڈسٹری کا غم ستانے لگا،بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے پیسوں کو چار ماہ تک روکا گیا اور اب احساس کے نام سے لوگوں کی غربت کا تماشا بنایا جاررہا ہے۔صوبے میں صحت کا نظام بیٹھ چکا، ہسپتالوں کے اوپی ڈیز بند ہوچکے، مریض رول رہے ہیں۔ان حالات میں بھی وزیراعظم سیاست سے باز نہیں آرہے اور ٹائگر فورس کے نام سے اپنی سیاست کر رہے ہیں۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے فیصل کریم کنڈی نے کہا حکومت بتائے کہ بیرونی ممالک سے ملنے والاامدادی سامان کہاں تقسیم ہواِ ملک بھر کے ڈاکٹر اور طبہ عملہ سراپہ احتجاج ہیں،پارلیمنٹ کا دروازہ بند کردیا گیا ہے۔سینیٹر روبینی خالد نے کہا کہ وقت اپنی مدد آپ کرنے کا ہے سیاست کو بالائے طاق رکھنا ہوگا،حکومت ہوش کے ناخن لے، صوبے کو فل ٹائم وزیر صحت کی ضرورت ہے۔7سال تک خیبر پختونخو اکے محکمہ صحت کے سیاہ وسفید کا مالک رہنے والے نوشیروان برکی کہاں ہیں؟

مزید :

پشاورصفحہ آخر -