جنوبی وزیر ستان،85 پولیٹیکل محررز کا عدم تنخواہوں کیخلاف احتجاجی کیمپ

جنوبی وزیر ستان،85 پولیٹیکل محررز کا عدم تنخواہوں کیخلاف احتجاجی کیمپ

  

ٹانک(نمائندہ خصوصی)جنوبی وزیرستان کے 85 پولیٹکل محرروں نے اپنے حقوق کے حصول کے لئے قلم چھوڑہڑتال کرکے ذیٹی کمیشنر کمپاونڈ میں احتجاجی کیمپ لگالیا تفصیلات کے مطابق جنوبی وزیرستان میں گذشتہ 15/20سالوں سے Adf میں سے قلیل تنخواھوں کے عوض ڈیوٹی سر انجام دینے والوں 85 پولیٹکل محررز/جونئر کلرکوں نے اج ٍڈپٹی کمیشنر کمپاونڈ میں قلم چھوڑ ہڑتال کرکے احتجاجی کیمپ لگا لیا اس موقع پر کلرک یونین کے صدر محمداصضر نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہم گزشتہ 15/20سالوں سے اپنے سروں کو ہتھیلی پر رکھ کر انتہائی مشکل حالات میں ڈیوٹیاں سرانجام دئے ہیں جس میں ہمارے کئی ساتھی دہشتگردوں کے ہاتھوں شدید زخمی بھی ھوے ہیں ان کاکہناتھاکہ فاٹا مر جرکے بعد ہمیں پولیس میں ضم کر دئے گئے جہاں سے ہمیں 2تنخواہیں بھی دئے گئے ہیں ان کا کہناتھا کہ گزشتہ 5 مہینوں سے ہماری تنخواہیں یہ کہہ کر روک دئے گئے ہیں کہ ھوم ڈیپارٹمنٹ سے نوٹیفکشن نہیں کیا گیا انکا کہناتھا کہ ڈی سی افس میں اس وقت 35 سیٹیں خالی پڑی ہیں ان کا کہناتھا کہ ہمیں ان خالی 35 سیٹوں پر ایڈ یجسٹ کردئے جاہیں اور باقی ماندہ محرروں کو پولیس فورس میں اپنی تعلیمی قابلیت کے مطابق سکیل 14 پر ریگولر بھرتی کرکے نوٹیفکشن جاری کیا جائے اور گذشتہ 5 مہینوں سے بند شدہ تنخواھوں کو فوری طور پر ریلیز کردئے جائے ان کاکہناتھا کہ اگر ہمارے مطالبات پورے نہ گئے گئے تو ہم وزیراعلی خیبر پختونخواہ آفس کے سامنے احتجاجی کیمپ لگانے سمیت بنی گالا کارخ کرینگے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -