جلد کا انفیکشن بھی کرونا وائرس کی ایک علامت،نئی تحقیق میں انکشاف

  جلد کا انفیکشن بھی کرونا وائرس کی ایک علامت،نئی تحقیق میں انکشاف

  

بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک)چین سے دنیا بھر کے تقریباً تمام ممالک کو اپنی لپیٹ میں لینے والے خطرناک کرونا وائرس سے متعلق سائنسدان دن رات تحقیقات کر رہے ہیں۔ماہرین کی جانب سے کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے سماجی دوری اختیار کرنے، لوگوں کو آپس میں مصافحہ اور گلے ملنے سے منع کیا گیا ہے۔ماہرین نے سب سے پہلے کرونا وائرس کی علامات میں تیز بخار، خشک کھانسی اور سانس لینے میں دشواری پیش آنے کے حوالے سے بتایا تھا۔بعد ازاں سائنسدانوں کی جانب سے کرونا وائرس کی علامات پر مزید تحقیق کی گئی تو یہ بات سامنے آئی کہ کرونا وائرس سے متاثرہ شخص کی سونگھنے اور چکھنے کی صلاحیت متاثر ہونے کیساتھ پٹھوں میں تکلیف بھی ہوتی ہے۔لیکن اب کرونا وائرس کی ایک اور نئی علامت سامنے آئی ہے جس کا تعلق جِلد سے ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کرونا وائرس سے متاثرہ شخص میں پاؤں کی انگلیوں میں انفیکشن یا پاؤں کی انگلیاں نیلی ہونے کی علامت بھی ظاہر ہوئی ہے۔حال ہی میں امریکی ریاست لاس اینجلس میں ایک خاتوں پاؤں کی انگلیاں نیلی ہونے کے بعد ہسپتال پہنچی جہاں ان میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔اب امریکن اکیڈمی آف ڈرماٹولوجی کی جانب سے ایک گائیڈ لائن جاری کی گئی ہے جس کے مطابق انسان کی جِلد پر مختلف نشانات (جیسے مکڑی یا کسی کیڑے کے کاٹنے سے ہو نیوالے زخم کی طرح ہونے کا تعلق بھی کووڈ-19 سے ہے۔جرنل آف امریکن اکیڈمی آف ڈرماٹولوجی میں شائع ہونیوالے مطالعے کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ کووڈ-19 کے مریضوں میں جِلد کے عام انفیکشن کی طرح دکھنے والے ریشز ہونے کے بھی امکانات ہو سکتے ہیں۔ماہرین نے لوگوں کو ہدایت جاری کی ہے کہ وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے ضروری ہے کہ اگر کسی بھی شخص کو اس طرح کے جِلد کے انفیکشن کا سامنا ہو تو فوری تشخیص کرائے۔

نئی علامت

مزید :

صفحہ آخر -