کرونا ٹیسٹ کی تعداد بڑھانے سے ہی مریض سامنے آئینگے: سعید غنی

کرونا ٹیسٹ کی تعداد بڑھانے سے ہی مریض سامنے آئینگے: سعید غنی

  

کراچی (این این آئی)وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے کہاہے کہ اگر حکومت نے دیکھا کہ ایس او پیرز پر عمل نہیں ہورہا تو فیصلے پر نظر ثانی کرسکتی ہے۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے سعید غنی نے کہا کہ انتظامیہ کیلئے بہت مشکل ہوگا کہ ہر مسجد میں جاکر ایس او پی پر عمل کروائیں، یہ مسجد کی انتظامی کمیٹی کی ذمہ داری ہوگی کہ احتیاطی تدابیر پر عمل کروائیں۔انہوں نے کہاکہ کرونا ٹیسٹ زیادہ کریں گے تو مریضوں کی تعداد بھی زیادہ سامنے آئے گی، سندھ میں کورونا سے زیادہ تر اْن افراد کا انتقال ہوا جو پہلے سے بیمار یا بزرگ تھے۔سعید غنی نے کہا کہ ہماری کوشش تھی کہ پورے ملک میں ایک ہی پالیسی ہو لیکن بد قسمتی سے شروع میں ہی ملک میں ایک پالیسی پر کام نہیں ہوا۔انہوں نے کہا کہ کرونا سے متعلق فیصلے روزانہ کی بنیاد پر صورتحال کو مدنظر رکھ کر کیے جارہے ہیں۔ دریں اثناپیپلز پارٹی کے رہنما مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ وفاقی وزرا کرونا سے نمٹنے کے حکومتی اقدامات کو روند رہے ہیں۔ گزشتہ روز ایک وفاقی وزیر نے لاہور ریلوے اسٹیشن پر جلسہ کیا، ایک اور وزیر ملتان میں احساس سے عاری ہو کر ہجوم لگائے بیٹھے ہیں۔ایک بیان میں مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ کچھ روز قبل وزرا کراچی میں بھی لاک ڈاؤن کا قانون توڑتے پھر رہے ہیں، وزیراعظم بتائیں کہ ان کی حکومت عوام کے ساتھ ہے یا کورونا کے ساتھ ہے؟انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومتیں مشکل سے لاک ڈاؤن پر عمل کراتی ہیں اور وفاقی وزرآکر توڑ جاتے ہیں، وفاقی وزرا قانون توڑنے سے باز نہ آئے تو ان کے خلاف مقدمات درج کئے جائیں۔

سعید غنی،چانڈیو

مزید :

صفحہ آخر -