تعمیرات سے متعلقہ ٍصنعتوں کو کھولنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے: اسلام آباد چیمبر

  تعمیرات سے متعلقہ ٍصنعتوں کو کھولنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے: اسلام آباد ...

  

اسلام آباد (کامرس ڈیسک) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر محمد احمد وحید نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان نے 14اپریل سے ملک میں کنسٹریکشن انڈسٹری کو کھولنے کا اعلان کیا تھا لیکن اسلام آباد میں سٹیل اور پائپ سمیت کنسٹریکشن شعبے کی صنعتوں کو کھولنے کا نوٹیفیکیشن ابھی تک جاری نہیں کیا گیا جس وجہ سے اس شعبے کی تمام صنعتیں ابھی تک بند ہیں اور مزدور بے کار ہیں۔ لہذا انہوں نے چیف کمیشنر اسلام آباد سے اپیل کی کہ اسلام آباد میں سٹیل، پائپ اور ماربل سمیت کنسٹریکشن شعبے کی تمام صنعتوں کو کھولنے کا نوٹیفیکیشن بلا تاخیر جاری کیا جائے تا کہ صنعتیں دوبارہ اپنی پیداواری سرگرمیاں شروع کر سکیں اور ورکرز باروزگار ہو سکیں۔ انہوں نے کہا کہ بند شدہ پیداواری سرگرمیوں کو بحال کرنے میں تقریبا 2ماہ درکار ہوتے ہیں لہذا انتظامیہ ان صنعتوں کو فوری طور پر اپنا کام شروع کرنے کی اجازت دے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں سٹیل ری رولنگ، سٹیل پائپ مینوفیکچرنگ اور ماربل اہم صنعتیں ہیں جبکہ صرف سٹیل اور پائپ تیار کرنے والی صنعتوں میں تقریبا 12ہزار ورکرز کام کرتے ہیں لیکن ان صنعتوں کے بند ہونے سے ہزاروں ورکرز اس وقت بیکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صنعتکاراب تک ورکروں کو اپنی جیب سے تنخواہ دے رہے ہیں لیکن اگر صنعتیں فوری طور پر نہ کھولی گئیں تو ورکروں کے بے روزگار ہونے کا خطرہ ہے کیونکہ بغیر پیداواری سرگرمیوں کے صنعتکاروں کیلئے ان کو تنخواہیں جاری رکھنا مشکل ہو جائے گا۔ محمد احمد وحید نے کہا کہ خیبر پختونخواہ میں کنسٹریکشن شعبے کی صنعتیں کھول دی گئی ہیں لیکن اسلام آباد میں یہ صنعتیں بند ہونے کی وجہ سے وفاقی دارالخلافہ میں جاری کنسٹریکشن منصبوں کیلئے سٹیل، پائب اور ماربل سمیت دیگر سامان باہر سے منگوایا جا رہا ہے جس وجہ سے اسلام آباد کی صنعتوں کا کاروبار مزید متاثر ہو رہا ہے لہذا انہوں نے مطالبہ کیا کہ انتظامیہ ان حقائق کی روشنی میں کنسٹریکشن شعبے کی تمام صنعتوں کو مزید کسی تاخیر کے کھولنے کی اجازت دے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے کنسٹریکشن انڈسٹری کیلئے ایک پرکشش پیکج کا اعلان کیا ہے تاہم انہوں نے کہا کہ اگر اسلام آباد میں کنسٹریکشن انڈسٹری سے وابستہ صنعتوں کو اپنا کاروبار کھولنے کی فوری اجازت نہ دی گئی تو پھر اس پیکج کا کوئی فائدہ نہیں ہو گا۔اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر طاہر عباسی اور نائب صدر سیف الرحمٰن خان نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے پہلے ہی کاروبار کو بہت نقصان پہنچ چکا ہے جبکہ حکومت نے کنسٹریکشن انڈسٹری کو کھولنے کا اعلان کر کے مایوسی کا شکارتاجروں وصنعتکاروں کو نئی امید دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ کنسٹریکشن شعبے کی کاروباری برادری ضلعی انتظامیہ کی طرف سے جاری کردہ ایس او پیز پر مکمل عمل درآمد کرانے کر تیار ہے اور اس سلسلے میں بھرپور تعاون کرے گی لہذا انہوں نے مطالبہ کیا کہ جلد ایس او پیز کو حتمی شکل دے کر سٹیل اورپائپ سمیت کنسٹریکشن شعبے کی تمام صنعتوں کو کھولنے کے احکامات جاری کئے جائیں تا کہ کاروباری سرگرمیاں کھلنے سے روزگار کا سلسلہ بحال ہو اور عوام کی مشکلات کم ہوں۔

مزید :

کامرس -