زکوۃ ٰ، تنخواہوں، بیرونی دوروں کیلئے نہیں: چیف جسٹس، سپریم کورٹ نے وفاق اور چاروں صوبوں سے کارکردگی رپورٹس طلب کر لیں، زکوۃٰ کی رقم کے بارے میں اسلامی نظریاتی کونسل،مفتی تقی عثمانی سے شرعی رائے بھی طلب

    زکوۃ ٰ، تنخواہوں، بیرونی دوروں کیلئے نہیں: چیف جسٹس، سپریم کورٹ نے وفاق ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، آئی این پی) چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے ہیں کہ کوٰۃکے پیسے سے دفتری امور نہیں چلائے جا سکتے، زکوٰۃ کا پیسہ بیرون ملک دوروں کے لیے نہیں ہوتا، افسران کی تنخواہیں بھی زکوٰۃ فنڈ سے دی جاتی ہیں، زکوٰۃ فنڈ کا سارا پیسہ ایسے ہی خرچ کرنا ہے تو کیا فائدہ۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مزارات کا پیسہ اللہ تعالیٰ کی راہ میں خرچ کے لیے ہوتا ہے، مزارات کی حالت دیکھ لیں سب گرنے والے ہیں، سمجھ نہیں آتا اوقاف اور بیت المال کا پیسہ کہاں خرچ ہوتا ہے۔ پیر کو چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 5 رکنی لارجر بینچ نے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی ۔ دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ محکمہ زکوٰۃ نے کوئی معلومات نہیں دیں، جواب میں صرف قانون بتایا گیا ہے۔ جس پر اٹارنی جنرل خالد خان نے کہا کہ وفاقی حکومت زکوۃ فنڈ صوبوں کو دیتی ہے۔ صوبائی حکومتیں زکوۃ مستحقین تک نہیں پہنچاتیں، اس فنڈ کا بڑا حصہ تو انتظامی اخراجات پر لگ جاتا ہے۔اٹارنی جنرل کے جواب پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ زکوٰۃکے پیسے سے دفتری امور نہیں چلائے جا سکتے، زکوٰۃ کا پیسہ بیرون ملک دوروں کے لیے نہیں ہوتا، افسران کی تنخواہیں بھی زکوٰۃ فنڈ سے دی جاتی ہیں، زکوٰۃ فنڈ کا سارا پیسہ ایسے ہی خرچ کرنا ہے تو کیا فائدہ۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ مزارات کا پیسہ اللہ تعالیٰ کی راہ میں خرچ کے لیے ہوتا ہے، مزارات کی حالت دیکھ لیں سب گرنے والے ہیں، سمجھ نہیں آتا اوقاف اور بیت المال کا پیسہ کہاں خرچ ہوتا ہے، مزارات کے پیسے سے افسران کیسے تنخواہ لے رہے ہیں، ڈی جی بیت المال بھی زکوٰۃفنڈ سے تنخواہ لے رہے ہیں، بیت المال والے کسی کو فنڈ نہیں دیتے، سندھ کی حکومت ہو یا کسی دوسری صوبے کی، مسئلہ یہ ہے کہ کسی کام میں شفافیت نہیں، صرف یہ بتایا گیا کہ امداد دی گئی لہکم تفصیل نہیں دی گئی۔جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ رپورٹ کے مطابق وفاق نے 9 ارب سے زائد زکوٰۃجمع کی،مستحقین تک رقم کیسے جاتی ہے اس کا کچھ نہیں بتایا گیا، وفاقی حکومت کو زکوٰۃ فنڈ کا آڈٹ کروانا چاہیے، زکوٰ? فنڈ کے آڈٹ سے صوبائی خودمختاری متاثر نہیں ہو گی۔ سپریم کورٹ نے چاروں صوبوں اور وفاق کو آئندہ سماعت پر کارکردگی رپورٹ جمع کرانے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے زکوٰۃ اور بیت المال کی رقم سے متعلق اسلامی نظریاتی کونسل سے شرعی رائے طلب کرتے ہوئے سماعت 2 ہفتے کیلئے ملتوی کر دی۔۔ تحریری فیصلے میں چیف جسٹس گلزار احمد نے مفتی تقی عثمانی سے بھی رائے مانگ لی۔ چیف جسٹس نے کہا کسی کو علم نہیں ہوا سندھ حکومت نے ایک ارب کا راشن بانٹ دیا، سندھ حکومت چھوٹا سا کام کر کے اخباروں میں تصویریں لگواتی ہے، میڈیا پر سنا ہے کہ ایکسپائر ا?ٹا اور چینی دی گئی۔ جسٹس سجاد علی شاہ نے کہا سندھ سے متعلق باتیں بلاوجہ تو نہیں بنتی کوئی تو وجہ ہے۔سپریم کورٹ نے سیکرٹری صحت کو حاجی کیمپ کے دورے کا بھی حکم دیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ حاجی کیمپ قرنطینہ سنٹر میں کوئی سہولیات نہیں، کسی بھی چیز میں شفافیت نہیں، مزارات کے پیسے سے افسران کیسے تنخواہ لے رہے ہیں، صدقے کے پیسے تنخواہوں پر کیسے لگائے جا سکتے ہیں۔کرونا از خود نوٹس کیس میں وزارت صحت نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرا دی۔سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں کہا گیا کہ ملک سے 2 کروڑ ماسک سمگل کرنے کا الزامات بے بنیاد ہیں، 35 لاکھ ماسک چین کی حکومت کی درخواست پر ایکسپورٹ کئے گئے، ملک میں فیس ماسک کی کمی نہیں، این آئی ایچ میں کرونا وائرس کے مریضوں اور ان کے رابطہ داروں کے ٹیسٹس مفت کئے جا رہے ہیں۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ڈریپ کی سفارش پر پروٹو ٹائیپ وینٹی لیٹرز مقامی سطح پر بنانے کی اجازت دے دی گئی ہے، 100لائسنس ہولڈرز کو ڈبلیو ایچ او کے سٹنڈرڈ کے مطابق 300 سینیٹائیزر بنانے کی اجازت دی گئی ہے، اپریل کے آخر تک 20 ہزار ٹیسٹ کرنے کے اہل ہو جائینگے، گزشتہ چوبیس گھنٹے میں 6416 ٹیسٹ کئے گئے۔رپورٹ میں انکشاف کیا گیا کہ پی پی ایز کی قیمت مستحکم رکھنے کے لئے پورے ملک میں 100 سیزائد چھاپے مارے گئے، کرونا وائرس کی سپیشل ڈیوٹی کے دوران شہید ہونے والے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف کے لئے خصوصی پیکیج تیاری کے مراحل میں ہے۔

سپریم کورٹ

لاہو، اسلام آباد، پشاور،کراچی (سٹاف رپورٹر مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) ملک بھر میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 8 ہزار 418 تک پہنچ گئی جبکہ ایک دن میں 17 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد اموات کی تعداد 176 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 425 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، پنجاب میں سب سے زیادہ 3721، سندھ میں 2537، خیبر پختونخوا میں 1235، بلوچستان میں 432، گلگت بلتستان میں 163، اسلام آباد میں 181 جبکہ آزاد کشمیر میں 49 کیسز رپورٹ ہوچکے۔ملک بھر میں اب تک ایک لاکھ 4 ہزار 302 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 4873 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 1970 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 44 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔پاکستان میں کورونا سے ایک دن میں 17 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 176 ہوگئی۔ سندھ میں 56، پنجاب میں 42، خیبر پختونخوا میں 67، گلگت بلتستان میں 3، بلوچستان میں 5 اور اسلام آباد میں 3 مریض جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ اب تک 462 ہسپتالوں میں قائم قرنطینہ مراکز مریضوں کا علاج جاری ہے، ان ہسپتالوں میں 7295 بیڈز کا بندوبست کیا گیا ہے۔

پاکستان ہلاکتیں

نیویارک، لندن،ماسکو، ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)دنیا بھر میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 24 لاکھ 7 ہزار 339 ہو چکی ہے جبکہ اس سے ہلاکتیں 1 لاکھ 65 ہزار 69 ہو گئیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق کورونا وائرس کے دنیا بھر میں 16لاکھ 17ہزار 143 مریض اب بھی ہسپتالوں میں زیرِ علاج ہیں، جن میں سے،متعدد کی حالت تشویش ناک ہے جبکہ 6 لاکھ 25 ہزار 127 اس بیماری سے نجات پا کر اسپتالوں سے اپنے گھروں کو لوٹ چکے ہیں۔امریکا کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے جہاں ناصرف کورونا مریض بلکہ اس سے ہلاکتیں بھی دنیا کے تمام ممالک میں سب سے زیادہ ہیں۔امریکا میں کورونا وائرس سے مجموعی ہلاکتیں 40 ہزار 565 ہو گئیں جبکہ اس سے بیمار ہونے والوں کی مجموعی تعداد 7 لاکھ 64 ہزار 265 ہو گئی ہے۔امریکا کے اسپتالوں میں 6 لاکھ 52 ہزار 688 کورونا مریض زیرِ علاج ہیں جن میں سے14 ہزار 711 کی حالت تشویش ناک ہے اسپین میں کورونا کے اب تک 1 لاکھ 98 ہزار 674 مصدقہ متاثرین سامنے آئے ہیں جب کہ اس وباء سے اموات 20 ہزار 453 ہو چکی ہیں۔اٹلی میں کورونا سے مجموعی اموات 23 ہزار 660 ہو چکی ہیں، جہاں اس وائرس کے اب تک کل کیسز 1 لاکھ 78 ہزار 972 رپورٹ ہوئے ہیں۔فرانس میں کورونا وائرس کے باعث مجموعی ہلاکتیں 19 ہزار 718 ہوگئیں جبکہ کورونا کیسز 1 لاکھ 52 ہزار 894ہو گئے۔جرمنی میں کورونا سے کْل اموات کی تعداد 4 ہزار 642 ہو گئی جبکہ کورونا کے کیسز 1 لاکھ 45 ہزار 742 ہو گئے۔برطانیہ میں کورونا سے اموات کی تعداد 16 ہزار 60 ہوگئی جبکہ کورونا کے کیسز کی تعداد 1 لاکھ 20 ہزار 67 ہو گئی۔چین میں کورونا سے کل ہلاکتیں 4 ہزار 632 ہو گئی ہیں جبکہ کْل کورونا کیسز 82 ہزار 747 ہو گئے۔ترکی میں کورونا وائرس سے جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 1 ہزار 890 ہو گئی جبکہ کورونا کے کل کیسز 82 ہزار 329 ہو گئے۔ایران میں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی کل تعداد 5 ہزار 118 ہو گئی جبکہ کورونا کے کل کیسز 82 ہزار 211 ہو گئے۔کورنا وائرس سے روس میں کل اموات 361 ہو گئی ہیں جبکہ اس کے مریضوں کی تعداد 42 ہزار 853 ہو چکی ہے۔سعودی عرب میں کورونا وائرس سے اب تک کل اموات97 رپورٹ ہوئی ہیں جبکہ اس کے مریضوں کی تعداد9ہزار 362تک جا پہنچی ہے۔پاکستان میں کورونا کے مریضوں کی کل تعداد 8 ہزار 175 ہوچکی ہے جبکہ اس وباء سے اموات کی مجموعی تعداد 167 ہو گئی۔ملک میں 6 ہزار 107 کورونا کے مریض اب بھی اسپتالوں میں زیرِ علاج ہیں، جن میں سے 46 کی حالت تشویش ناک ہے جبکہ 1 ہزار 901 مریض اللّٰہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے اس بیماری سے صحت یاب ہو چکے ہیں سعودی عرب میں کرونا وائرس کا شکار ہونے والے افراد کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔گذشتہ 24 گھنٹے میں 1088 نئے کیسوں کی تصدیق کی گئی ہے اور مزید پانچ افراد اس مہلک وَبا کی نذر ہوگئے۔اس طرح اب کل متوفیوں کی تعداد 97 ہوگئی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی وزارتِ صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی کے مطابق مملکت میں اس مہلک وائرس کا شکار افراد کی تعداد 9362 ہوگئی ہے۔نئے کیسوں میں 17 فی صد سعودی عرب کے شہری ہیں اور 83 فی صد غیر شہری ہیں۔

عالمی ہلاکتیں

مزید :

صفحہ اول -