کرونا بے قابو، سرکاری ہسپتالوں میں آؤٹ ڈور 7روز کیلئے بند آپریشن ملتوی 

کرونا بے قابو، سرکاری ہسپتالوں میں آؤٹ ڈور 7روز کیلئے بند آپریشن ملتوی 

  

 ملتان، مظفر گڑھ، منظور آباد مڑل، ہارون آباد، میاں چنوں، محسن وال(وقائع نگار، نیوز رپورٹر، خصوصی رپورٹر، بیورو رپورٹ، تحصیل رپورٹر، نمائندہ پاکستان، نامہ نگار) کرونا وائرس کے خدشات کے سبب محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب نے ملتان سمیت سات ہائی رسک اضلاع میں سرکاری ٹیچنگ  ہسپتالوں میں مختلف شعبوں کے آوٹ ڈور مزید سات روز کے لئے بند کرنے اور آپریشن (بقیہ نمبر18صفحہ6پر)

ملتوی کرنے کا حکم دیا ہے۔جسکے تحریری احکامات جاری کردیے گئے ہیں۔نشتر ہسپتال،نشتر انسٹی ٹیوٹ آف ڈینٹسٹری ملتان سمیت ان اضلاع کے ٹیچنگ ہسپتالوں میں امراض ناک،کان،گلا،امراض چشم،امراض جلد،دانتوں کے امراض کے آوٹ ڈور بند اور آپریشن ملتوی رہیں گے۔آوٹ ڈور کھولنے اور آپریشن بحال کرنے بارے 27 اپریل 2021 کو دوبارہ جائزہ لیا جائے گا۔تاہم ان شعبوں کے ڈاکٹروں و سٹاف سے کورونا ایمرجنسی کے دوران ڈیوٹی لی جائے گی۔ملتان،لاہور،راولپنڈی،گجرات،گوجرانوالہ،سیالکوٹ،فیصل آباد کے ٹیچنگ ہسپتالوں میں دیگر تمام آوٹ ڈور کورونا سے بچا بارے احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کرتے ہوئے کھلے رہیں گے اور مریضوں کا چیک اپ کیا جائے گا چلڈرن کمپلیکس کے ڈین  سمیت چلڈرن کمپلیکس کے پانچ ڈاکٹروں اور نشتر ہسپتال کے سکیورٹی انچارج و اہل خانہ  میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،جہنوں نے خود گھر میں آئی سو لیٹ کرلیا ہے۔معلوم ہوا ہے نشتر ہسپتال کے  سیکیورٹی انچارج   شیر خان کے کورونا کی علامات ظاہر ہونے پر خون  ٹیسٹ لیے گئے۔جسکی رپورٹ  پازیٹو آئی ہے۔اسی طرح انکے  اہلخانہ میں بھی بعض افراد میں تصدیق ہوئی ہے۔ جبکہ دیگر  کی رپورٹس کا انتظار ہے۔دوسری جانب  چلڈرن ہسپتال کے ڈین پروفیسر ڈاکٹر وقار ربانی اور اسی ہسپتال کے  05 ڈاکٹروں میں بھی کورونا پازیٹو ایا ہیاور گھر میں آئی سو لیٹ ہوگئے ہیں۔پروفیسر ڈاکٹر وقار ربانی کے آئی سو لیٹ ہونے کے بعد ہسپتال کے  ڈین کے عہدے کا اضافی چارج  پروفیسر ڈاکٹر کاشف چشتی کے پاس ہوگا۔ نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا کوئی نیا مریض جاں بحق نہیں ہوا ہے۔اموات کی مجموعی  تعداد 571 برقرار ہے.زیر علاج کورونا کے مریضوں کی  تعداد 96 ہوگئی،18 مریضوں کی حالت تشویشناک،شبہ میں 49 مریض زیر علاج،تفصیل کے مطابق  فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان ارشد  نے بتایا کہ  نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں زیر علاج کوئی نیا مریض کورونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق نہیں ہوا ہے۔یوں یکم اپریل 2020  سے 20 اپریل 2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 571 برقرار ہے۔جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 96 ہو گئی ہے۔ جبکہ زیر علاج 18 مریضوں  کی حالت تشویشناک  ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 49 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 5 ہزار 268 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 1 ہزار 9 سو 96  افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔ ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کی ہدایت پر کورونا وائرس سے بچاو کے لئے ایس او پیز اختیار نہ کرنیوالوں کے خلاف بھر پور ایکشن لیتے ہوئے 2 افراد گرفتار جبکہ 5 افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیا ہے اور ایک دکان کو سیل کیا گیا ہے۔کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر80 ہزار روپے سے زائد جرمانے بھی عائد کئے گئے۔اسی طرح کورونا ایس او پیز نظرانداز کرنے پر9 بسوں کو چالان کیا گیا اور انکے مالکان پر21 ہزار روپے عائد کیا گیا۔کارروائی گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کی گئی۔کورونا وائرس کی تیسری لہر کے دوران مریضوں کی تعداد بڑھنے لگی۔ احتساب عدالت ملتان میں کورونا کا کیس سامنے آنے پر کورٹ کو سیل کردیا گیا۔ نائب قاصد ایوب کا گزشتہ روز کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا جنہیں فوری طور پر قرنطینہ کردیا گیا ہے جبکہ دیگر اہلکاروں و افسران کو بھی ٹیسٹ کراکے احتیاط برتنے کی ہدایت جاری کردی گئی ہیں۔عدالت کو 24 اپریل تک سیل کیا گیا ہے گزشتہ روز سے پورے ہفتے کے مقدمات کو بھی ملتوی کردیا گیا ہے جن کی پیشی بعد میں مقرر کی جائے گی۔ سابق امیدوار صوبائی اسمبلی، حلقہ پی پی 271 مظفرگڑھ، خان گڑھ کی دبنگ سیاسی و عوامی شخصیت چودھری محمد عامر کرامت کورونا وائرس کے باعث انتقال کر گئے، وہ ترکش ہسپتال مظفرگڑھ میں کئی دنوں سے زیر علاج تھے جہاں وہ منگل کی رات خالق حقیقی سے جا ملے، انہوں نے پسماندگان میں بیوہ، تین بیٹیاں اور ایک بیٹا سوگوار چھوڑا ہے، مرحوم کی نماز جنازہ خان گڑھ اسٹیڈیم میں ادا کی گئی جس میں سابق آئی جی پولیس میاں محمد ایوب قریشی، سربراہ عوامی راج پارٹی جمشید احمد دستی، مشیر وزیر اعلی پنجاب سردار عبدالحئی دستی، رکن صوبائی اسمبلی سردار عون حمید ڈوگر، چیئرمین پنجاب وکلا محاذ رانا امجد علی امجد ایڈووکیٹ، سابق صدر بار اقبال خان پتافی، سابق ایم پی اے ملک قسور لنگڑیال، سینئر ہیڈ ماسٹر رانا فرزند علی، پیر عامر اقبال سلطانی، میاں محمد اسماعیل بھٹہ، حاجی قربان حسین، تحصیل دار چودھری ساجد، شہزاد خان ددو، رانا واجد علی ایڈووکیٹ، ڈاکٹر عبدالرشید شیخ، نوابزادہ محمد بلال خان، ساجد بلوچ، لیاقت بشیر شیخ، ڈاکٹر محمد امین اللہ، ریحان قریشی، ملک نذیر سندیلہ، ڈاکٹر سعید شیخ،  ڈاکٹر چودھری شفیق احمد، صدر بار سردار عبدالقیوم خان دستی، جنرل سیکرٹری بار ملک شفیق الرحمن ملانہ، ماجد خانزادہ، اے بی مجاہد، مہر راشد نصیر سیال، چودھری لیاقت علی، چودھری عدنان، چودھری کرامت علی، مسرور احمد خان، شاہد حسین خان، لیاقت علی شیخ سابق چیئرمین بلدیہ، کرم الہی قریشی، سید عامر شاہ، محمد اجمل چانڈیہ، اصغر بلوچ، فیاض بھٹہ، قاری عبد اللطیف، قاری اصغر سعیدی، سمیت ہر مکتب فکر کے نمائندہ افراد نے شرکت کی، نماز جنازہ مولانا نذیر احمد نے پڑھائی۔ مظفر گڑھ میں کورونا وائرس کے شکار افراد میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے ترکی ہسپتال اور ڈی ایچ کیو ہسپتال مظفر گڑھ مریضوں سے بھر گئے مریض نشتر ہسپتال ملتان منتقل کرنا شروع کردئیے ہیں پاکستان گروپ آف جرنلسٹس ضلع بہاولپورکی خواتین ونگ کی صدر نرگس پروین مہر کا کرونا ٹیسٹ پازٹیو آگیا،انہوں نے خود کو اپنیگھر میں قرنطینہ کر لیا ہے ان کی صحت یابی کے لیے پاکستان گروپ آف جرنلسٹس آفس میں بھاولپور میں ان کیلئے دعا صحت کی گئی ہارون آباد میں کورونا وائرس کی تیسری لہر شدت اختیار کر گئی ہے، محکمہ صحت کے مطابق گورنمنٹ ماڈل گرلز ہائی سکول ہارون آباد کے چار خاتون ٹیچر ز میں کورونا وائرس کی تشخیص ہو چکی ہے جس پر محکمہ ایجوکیشن نے سکول ہذا کو 19اپریل سے 3مئی تک کے لئے بند کردیا ہے، خاتون ٹیچرز میں کورونا وائرس میں تشخیص پر سکول ہذٰا کے دیگر اساتذہ کرام، طلباء اور والدین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے، واضع رہے کہ چند روز قبل گورنمنٹ رضویہ اسلامیہ ہائی سکول ہارون آباد کے پرائمری حصہ کو بھی ٹیچر میں وائرس کی تصدیق کی بنا پر 14روز کے لئے سیل ہے۔ میاں چنوں کورونا کی تیسری لہر شدت اختیار کر گء گورنمنٹ معین السلام ہائی سکول کے 3ٹیچر اور 1سٹوڈنٹ میں کورونا کی تشخیص ہو گئی کورونا کا شکار ہو نے والے ٹیچرز میں سجاد علی،سید سلمان حیدر، ناصر محمودشامل ہیں  جبکہ سٹوڈنٹس فیضان کا بھی کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ڈی ڈی ایچ او ڈاکٹر عثمان ضیا نے بتایا کہ کورونا کا شکار ہونے والے 4مریضوں کو گھروں میں آئسولیٹ کر دیا گیا ہے جبکہ   سکول کو7روز  سیل کرنے کے لئے لیٹر سی او ایجوکیشن خانیوال کو بھجوا دیا گیا۔

کرونا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -