حکومت اپنے پہلے معاہدے کی عہدشکنی نہ کرتی تو یہ حالات نہ ہوتے 

 حکومت اپنے پہلے معاہدے کی عہدشکنی نہ کرتی تو یہ حالات نہ ہوتے 

  

نائب امیر مرکزی جمعیت اہلحدیث ملک کے رہنما و ممتاز مذہبی رہنما ڈاکٹرعبدالغفورراشد نے کہا ہے کہ اگر حکومت نے ٹی ایل پی سے کئے گئے اپنے معاہدے کی عہدشکنی نہ کی ہوتی تو آج یہ صورتحال پیدا نہ ہوتی جو ہو چکی ہے حالات کی خرابی کی ذمے دار خود حکومت ہے کوئی اور نہیں ہے، بات چیت کا راستہ حکومت کو پہلے دن سے ہی اختیار کرلینا چاہئے تھا اگر حکومت بے دریغ طاقت کے ستعمال کی بجائے ہوش کے ناخن لیتی تو آج یہ صورت حال ہی پیدا نہ ہوتی جو کہ آج ہو چکی ہے۔ وہ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کررہے تھے۔ انکا کہنا تھا کہ تحریک لبیک پر پابندی کو ختم،ان کے گرفتار لوگوں کو فوری رہا اور ان پر قائم دہشت گردی کے مقدمات کو ختم کیا جائے اسی سے ملک میں مکمل طور پر امن قائم ہو گا اور حکومت کو اب معاہدے کی مکمل پاسداری بھی کرنا ہو گی اگر اب پھر حکومت معاہدے سے پھرے گی تواس کی ذمے داری حکومت پر عائد ہو گی۔

ڈاکٹرعبدالغفورراشد 

مزید :

صفحہ اول -