فلسطینی صدر کا امریکہ کے ساتھ تعلقات پر نظر ثانی کا اعلان

فلسطینی صدر کا امریکہ کے ساتھ تعلقات پر نظر ثانی کا اعلان
فلسطینی صدر کا امریکہ کے ساتھ تعلقات پر نظر ثانی کا اعلان
کیپشن: فائل فوٹو

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بیت المقدس (ڈیلی پاکستان آن لائن) فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس نے واشنگٹن کی جانب سے اقوام متحدہ کی مکمل رکنیت کے لیے فلسطین کی درخواست کو ویٹو کیے جانے کے بعد امریکہ کے ساتھ تعلقات پر نظرثانی کا اعلان کیا ہے۔

فلسطین کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ”وفا“ سے بات کرتے ہوئے محمود عباس نے کہا کہ ’فلسطینی قیادت امریکہ کے ساتھ دوطرفہ تعلقات پر نظر ثانی کرے گی تاکہ اپنے عوام کے مفادات، کاز اور حقوق کے تحفظ کو یقینی بنایا جا سکے‘۔

وفا کے مطابق فلسطینی صدر کا یہ بیان اقوم متحدہ کی سلامتی کونسل میں امریکہ کے ویٹو پاور کے استعمال کے بعد سامنے آیا ہے۔

محمود عباس نے کہا کہ ’فلسطینی قیادت قومی فیصلوں کے آزادانہ تحفظ کے لیے ایک نئی حکمت عملی تیار کرے گی اور امریکی وژن یا علاقائی ایجنڈے کے بجائے فلسطینی ایجنڈے پر عمل کرے گی‘۔

ان کا کہنا تھا کہ فلسطینی اُن کی اِن پالیسیوں کے یرغمال نہیں رہیں گے جو ناکام ثابت ہوئی ہیں اور پوری دنیا کے سامنے بے نقاب ہوچکی ہیں۔امریکی حکومت کےاس مؤقف نے فلسطینی عوام اور خطے کے عوام میں غیرمعمولی غصہ پیدا کیا ہے جو ممکنہ طور پر خطے کو مزید عدم استحکام، افراتفری اور دہشت گردی کی طرف دھکیل رہا ہے۔