بیرونی قرضوں کا بوجھ ایک ہفتے میں85 ارب روپے بڑھ گیا

بیرونی قرضوں کا بوجھ ایک ہفتے میں85 ارب روپے بڑھ گیا

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)انقلابی ریلیوں اور دھرنوں کے معیشت پر آفٹر شاکس آنے لگے۔بے یقینی کی صورتحال نے روپے کو کمزور کیا تو معیشت پر بیرونی قرضوں کا بوجھ صرف ایک ہفتے میں85 ارب روپے بڑھ گیا ۔گزشتہ کئی روز سے ملک میں جاری سیاسی ہلچل نے معیشت کو بھی ہلاکر رکھ دیا ہے۔ملک میں جاری دھرنوں اور انقلابی ریلیوں کا عام آدمی زندگیوں پر کو ئی خاص اثر تو نہ ہوا البتہ صرف ایک ہفتے کے دوران روپے کے مقابلےڈالر کی قیمت میں ایک روپے 30پیسے کے اضافے سے بیٹھے بٹھائے معیشت پر قرضوں کا بوجھ 85ارب روپے بڑھ گیا ہے یعنی کھایا پیا کچھ نہیں گلاس توڑا 12 آنے۔اب اس خسارے کوپورا کرنے کے لئے حکومت کو یا تو مزید قرضے لینا ہونگے یا پھر نئے نوٹ چھاپنا پڑینگے جس سے مہنگائی بڑھے گی ۔

اور عام آدمی کی حالت مزید پتلی ہونے کاخدشہ ہے۔

مزید :

کامرس -