احتجاجی مارچ اور دھرنے: پیاف کی ایگزیکٹوباڈی کا اجلاس آج ہوگا

احتجاجی مارچ اور دھرنے: پیاف کی ایگزیکٹوباڈی کا اجلاس آج ہوگا

  

لاہور(کامرس رپورٹر)دھرنوں اور انقلاب مارچ کی سیاست سے کاروباری سرگرمیوں میں جمود اور ملکی معیشت کو ناقابل برداشت نقصانات کا جائزہ اور اس سلسلے میں بزنس کمیونٹی کا لائحہ عمل بنانے کے لیے پیاف ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس 23 اگست کو طلب کر لیا گیا ہے ۔ ملک طاہر جاوید نے بتایا کہ اجلاس میں لاہور کی لگ بھگ تمام مارکیٹوں سے ایک سو سے زیادہ پیاف کے ایگزیکٹو ممبران ، سابقہ چیئرمین اور پیاف سے متعلق لاہور چیمبر کے سابقہ صدور شرکت کریں گے ۔ پیاف کے چیئرمین نے کہا ہے کہ دھرنوں اور پر تشدد انقلابی نعروں کی سیاست سے نہ صرف اسلام آباد میں کاروبار اور دوکانیں بند رہنے سے مقامی کاروباری طبقہ پریشان ہے ۔

بلکہ پورے ملک میں معاشی سرگرمیاں جمود کا شکار ہو چکی ہیں۔انہوں نے کہا ہے کہ کاروباری طبقہ دھرنے کے ڈمہ داران کو متعدد بار متوجہ کر چکا ہے کہ وہ ڈائیلاگ کا راستہ اختیار کریں تاکہ ملک کو اقتصادی نقصانات کا سامنا نہ کرنا پڑے لیکن ایسے محسوس ہوتا ہے کہ دھرنے کے ڈمہ داران کے نزدیک پاکستان میں صرف وہی لوگ ووٹر ہیں جو ان کے دھرنے میں شریک ہیں ۔ انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان کے کروڑوں چھوٹے بڑے کاروباری افراد قومی الیکشن میں کامیابی یا ناکامی میں فیصلہ کن کردار ادا کرتے ہیں اس لیے انہوں نے زور دیا ہے کہ ملک بھر کے کاروباری لوگوں کو ناراض کرنے کی بجائے بات چیت سے معاملات حل کریں ۔ پیاف کے چیئرمین نے کہا ہے کہ اسلام آباد کے دوکان دار اور کاروباری لوگ براہ راست نقصانات کا نشانہ بنے ہیں ۔ پیاف ایگزیکٹو کمیٹی اسلام آباد کے اپنے دوکاندار اور کاروباری بھائیوں سے اظہار ہمدردی کرے گی اور بزنس کمیونٹی کی آواز ایک بار پھر دھرنے اور مارچ کے ڈمہ داران تک پہنچائے گی کہ اب تک بہت نقصان ہو چکا ۔ ضد چھوڑیں ۔ ڈائیلاگ کا راستہ اختیار کریں ۔ پیاف کے چیئرمین نے بتایا ہے کہ اجلاس میں لاہور چیمبر الیکشن کے لیے مکمل لائحہ عمل فائنل کیا جائے گا۔

مزید :

کامرس -