بھارتی دلہنوں کو منفرد مسئلے کا سامنا، شوہروں کو چھوڑنے لگیں

بھارتی دلہنوں کو منفرد مسئلے کا سامنا، شوہروں کو چھوڑنے لگیں
بھارتی دلہنوں کو منفرد مسئلے کا سامنا، شوہروں کو چھوڑنے لگیں

  

نیو دہلی (نیوز ڈیسک) بھارتی گھروں میں بیت الخلاؤں کی عدم موجودگی پر گھریلو جھگڑے شروع ہوگئے ہیں اور تازہ ترین واقعے میں اترپردیش کی چھ نوبیاہتا دلہنوں نے اس وقت تک خاوندوں کے پاس لوٹنے سے انکار کردیا ہے جب تک وہ گھر میں بیت الخلاء تعمیر نہ کروادیں، بھارت کی ایک ارب بیس کروڑ آبادی میں سے نصف سے زائد بیت الخلاء کی سہولت سے محروم ہے اور دیہی علاقوں میں تو صورتحال بہت ابتر ہے اور کھیتوں اور جھاڑیوں میں جانے والی اکثر خواتین پر جنسی حملے کئے جاتے ہیں۔ تازہ ترین واقعے میں گھر چھوڑنے والی خواتین کا تعلق خوشی نگر شہر کے گاؤں کھیسیہ سے ہے۔ گڈیا نامی دلہن نے بی بی سی کو بتایا کہ اس کے والدین کے گھر میں بیت الخلاء تھا لیکن خاوند رامیش شرما نے اس سہولت سے محروم رکھا جس کی وجہ سے جھگڑا ہوگیا اور اسے گھر چھوڑنا پڑا، اسی طر ح نیلم شرما، سکینہ، سیتا، نظرالنساء اور کالاوتی نامی خواتین بھی اپنے گھر چھوڑی چکی ہیں۔ ان کاکہنا تھا کہ یہ بہت بڑا ظلم ہے کہ نئی نویلی دلہنوں کو گرمی اور برسات کے موسم میں رفع حاجت کیلئے کھیتوں اور جھاڑیوں کا رخ کرنا پڑتا تھا اور وہاں بدکردار مردوں کی طرف سے جنسی حملوں کا بھی دھڑکا لگارہتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -