وزیراعظم کو چاروں وزرائے اعلیٰ سمیت مستعفی ہوجانا چاہئے، شبیر چوہدری

وزیراعظم کو چاروں وزرائے اعلیٰ سمیت مستعفی ہوجانا چاہئے، شبیر چوہدری

  

فیصل آباد(بیورورپورٹ)ریٹائرڈ چیف آفیسر شبیر احمد چوہدری نے کہا ہے کہ عمران خان اور طاہرالقادری سے مذاکرات کرنے کیلئے سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر‘ قومی اسمبلی میں لیڈر آف دی اپوزیشن اور دیگر جماعتوں کے پارلیمانی لیڈروں پر مشتمل کمیٹی بنائی جائے جو وفاقی حکومت کی نمائندگی کرتے ہوئے مذاکرات کرے‘ چاروں وزرائے اعلی اور وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف کو صدارتی حکم نامے کے تحت مستعفی ہوناچاہیے اوراپنے اختیارات سپیکر کی بجائے ڈپٹی سپیکر کو تفویض کرنا چاہئیں کیونکہ سپیکر اس وقت خود الیکشن ٹریبونل میں ایک پارٹی کی حیثیت رکھتے ہیں۔ ایک مراسلے میں انہوں نے کہا کہ دھاندلی کے حوالے سے معزز عدالت عظمی کا ایک کمیشن قائم کیا جائے جو 90دن کے اندر اندر تحقیقات کرے‘ ایکشن کمیشن میںاصلاحات کے لیے پارلیمانی کمیٹی قومی اسمبلی اور سینٹ کے اراکین پر مشتمل ہو وہ بھی اپنا کام 90دن میں مکمل کرے الیکشن کمیشن کے حوالے سے شبیر احمد چوہدری کا کہنا ہے کہ صوبائی الیکشن کمشنر سے استعفے لے لئے جائیں یا پھر سپریم کورٹ کو ریفرنس فاروڈ کیا جائے اورجوڈیشنل کمیشن الیکشن کمشنر کا آئینی پاکستان کے مطابق متبادل پیش کرے 90روز میں کام مکمل ہونے کے بعد 120دن کے اندر اندر جنرل الیکشن کا انعقاد کیا جائے اورنگران حکومت پارلیمانی کمیٹیوں‘قائدین‘ وزیر اعظم اور وزرائے اعلی کی مشاورت سے منتخب کی جائے

شبیر چودھری

مزید :

صفحہ آخر -