آزادی و انقلاب مارچ ، امریکہ نے غیرآئینی تبدیلی کی مخالفت کااعلان کردیا

آزادی و انقلاب مارچ ، امریکہ نے غیرآئینی تبدیلی کی مخالفت کااعلان کردیا
آزادی و انقلاب مارچ ، امریکہ نے غیرآئینی تبدیلی کی مخالفت کااعلان کردیا

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی محکمہ خارجہ نے کہاہے کہ منتخب وزیر اعظم سے غیر آئینی طور پر مستعفی ہونے کا مطالبہ نہیں کیا جاسکتا ، امریکہ پاکستان میں کسی بھی غیر آئینی تبدیلی کی حمایت نہیں کرے گا، فریقین تشدد سے گریز کریں ۔

امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان میری ہاف نے پریس بریفنگ میں کہاہے کہ امریکہ پاکستان میں آئینی اور انتخابی عمل کی حمایت کرتا ہے، نواز شریف انتخابات کے ذریعے 5 سال کے لئے وزیر اعظم منتخب ہوئے اور ان سے غیر آئینی طور پر مستعفی ہونے کا مطالبہ نہیں کیا جاسکتا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ پاکستان کے ساتھ جمہوریت کے فروغ کے لئے کام کررہا ہے اور پاکستان میں جمہوری عمل کی تقلید ہونی چاہئے۔

محکمہ خارجہ کی ترجمان نے کہاہے کہ پاکستان کی صورتحال پر پوری طرح نظر رکھے ہوئے ہے تاہم موجودہ صورت حال کو تشویشناک قرار نہیں دیا جاسکتا کیونکہ اس وقت سیاسی مذاکرات کے لئے کافی گنجائش موجود ہے ،تمام فریقین کو تشدد سے گریز کرتے ہوئے پرامن رہنا چاہئے۔

اس سے قبل امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے حقانی نیٹ ورک کے اہم رہنما سراج الدین حقانی سے متعلق معلومات دینے پر انعام کی رقم بڑھا کر ایک کروڑ ڈالر کرنے جبکہ دیگر 4 رہنماو¿ں عزیز حقانی، یحیٰ حقانی، خالد رحمان حقانی اور عبد الرو¿ف ذاکر سے متعلق معلومات دینے پر 50، 50 لاکھ ڈالر انعام کا اعلان بھی کیا گیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -Headlines -