مولانا فضل الرحمن جہاد کے نام پر لوگوں کے بچے بیچ رہے ہیں: مسرت شاہین

مولانا فضل الرحمن جہاد کے نام پر لوگوں کے بچے بیچ رہے ہیں: مسرت شاہین
مولانا فضل الرحمن جہاد کے نام پر لوگوں کے بچے بیچ رہے ہیں: مسرت شاہین

  

لاہور (ویب ڈیسک) اسلام آباد دھرنے میں شریک تحریک مساوات کی چیئرپرسن مسرت شاہین نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان نے اپنے بچے پڑھنے کے لئے بیرون ملک بھجوادئیے ہیں جبکہ لوگوں کے بچوں کو جہاد کے نام پر بیچ رہے ہیں۔ مقامی اخبار سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں اور معاملات کو خراب کرنے اور خون خرابے کے بغیر ہی مذاکرات کرکے کوئی حل نکالنا چاہیے کیونکہ اس وقت اسلام آباد کے لوگ بھی احتجاج میں شامل ہورہے ہیں اور حکومتی رویہ سے پریشان ہیں، حکمرانوں کو تمام مطالبات مان لینا چاہئیں۔ مولانا فضل الرحمن کی طرف سے طاقت کے استعمال کے اعلان پر مسرت شاہین نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن جعلی اسمبلی کی پیداوار ہیں، انہوں نے اپنے ہی پارٹی الیکشن میں منتوں اور ترلوں سے اپنے سیٹ بچائی ہے، مولانا نے ہمیشہ فلسطین، افغانستان اور کشمیر کے نام پر فنڈا اکٹھا کیا ہے، انہیں پاکستان کی یاد کیسے آگئی، ان کے اپنے حلقے ڈیرہ اسماعیل خان میں لوگوں کو پینے کا صاف پانی تک مہیا نہیں ہے، ان کے گھر کے سامنے ایک جوہڑ سے دس روپے ڈبہ کے حساب سے پانی فروخت کیا جاتا ہے جبکہ اس علاقے میں صدیوں سے رہنے والے لوگ ان کے ظلم کی وجہ سے نقل مکانی کرکے جارہے ہیں یا جاچکے ہیں۔

مزید :

لاہور -