پسند کی شادی کرنے والے جوڑوں کو ہراساں نہ کیا جائے،عدالت

پسند کی شادی کرنے والے جوڑوں کو ہراساں نہ کیا جائے،عدالت

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج نے پسند کی شادی کرنے والے دو جوڑوں کو ہراساں نہ کرنے کا حکم جاری کردیا ہے،عدالت میں درخواست گزارصنم بی بی نے اپنے وکیل کی وساطت سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا کہ اس نے اپنی مرضی سے ندیم کے ساتھ پسند کی شادی کی ہے لیکن اس کے گھر والے اس رشتہ سے خوش نہیں ہیں اور اسی وجہ سے اب وہ پولیس کی ملی بھگت سائلہ اور اس کے شوہر کو ہراساں کر رہے ہیں انکار پر مختلف حیلوں بہانوں سے تنگ کیا جارہا ہے ،اسی طرح دوسری درخواست میں شاہدرہ کی رہائشی مریم بی بی نے موقف اختیار کیا کہ اس کے گھر والے اس کی مرضی کے بغیر شادی کرنا چاہتے تھے جس پر وہ رضامند نہیں تھی۔

اور اسی وجہ سے اس نے پسند سے شادی کی ہے لیکن اب میرے گھر والے مجھ سمیت میرے شوہر کو مختلف ہیلوں بہانوں سے تنگ کیا جارہا ہے اور مقامی پولیس کی ملی بھگت سے جھوٹے مقدمہ میں ملوث کرنے کی دھمکیاں دے کر طلاق لینے پر مجبور کیا جارہا ہے عدالت سے استدعا ہے کہ قانون کے مطابق کارراوئی کا حکم دیا جائے ، عدالت نے پولیس کو حکم دیا ہے کہ دونوں درخواست جوڑوں کوہراساں نہ کیا جائے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4