حکمران شہریوں کو صافپانی فراہم کرنے میں ناکام ہوگئے،ذکر اللہ مجاہد

حکمران شہریوں کو صافپانی فراہم کرنے میں ناکام ہوگئے،ذکر اللہ مجاہد

لاہور ( پ ر) امیر جماعت اسلامی لاہور ذکراللہ مجاہد نے کہا ہے کہ لاہور شہر کو پیرس بنانے کا دعویٰ کرنیوالے حکمران شہریوں کو صاف پانی فراہم مہیا کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں ۔ شہر کی 50فیصد سے زائد آبادی آلودہ سیوریج ملا پانی استعمال کرنے پر مجبور ہے۔ان خیالا ت کااظہارگزشتہ روز انہوں نے اپنے بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ شہر کے مختلف علاقوں میں مون سون بارشوں کی وجہ سے سٹرکیں ، گلیاں، محلے بارش کا پانی جمع ہونے کی صورت میں ندی نالوں کا منظر پیش کرتے نظر آ تے ہیں جس کی بڑی وجہ سیوریج کے نظام کی تباہ حالی ہے ۔ انتظامیہ کی غفلت کی وجہ سے وہی پانی پینے کے صاف پانی میں مکس ہو رہا ہے۔

جس کی وجہ سے شہری انتہائی خراب پانی پینے پر مجبور ہیں ۔ ایک سروے کے مطابق چالیس فیصد بیماریاں گندہ ناقص پانی پینے کی وجہ سے ہوتی ہیں اور ملک میں 80فیصد آبادی کو پینے کا صاف پانی میسر نہیں ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ شہر میں صحت کی صورتحال انتہائی نا قابل حد تک خراب ہوچکی ہے لاہور جیسے بڑے شہر کے اندر اکثر سرکاری ہسپتالوں میں غریب عوام موت کے فرشتے کا انتظار کرنے لگے ہیں ۔ سرکاری ہسپتالوں میں جان بچانے والی ادویات کی کمی ڈرون حملوں کے مترادف ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4