تعمیراتی شعبہ سب سے زیادہ محصولات کا ذریعہ بن رہا ہے،عقیل کریم ڈھیڈھی

تعمیراتی شعبہ سب سے زیادہ محصولات کا ذریعہ بن رہا ہے،عقیل کریم ڈھیڈھی

کراچی (اکنامک رپورٹر) تعمیراتی شعبہ ملک پر بوجھ نہیں بلکہ ملکی خزانے میں سب سے زیادہ محصولات کا ذریعہ بن رہا ہے اگر ٹیکسو ں کا نظام درست نہ کیا گیا تو قومی اخراجات پورے کرنا دشوار ہو جائے گا جس دن حکومت عام آدمی کی زندگی بدلنے کا تہیہ کرلے گی ملک کی تقدیر بھی بدل جائے گی، دنیا بھر میں سوشل سکیورٹی کے نام پر حکومتیں اپنے عوام کو صحت، گھر اور روزگار کے مواقع فراہم کرتی ہیں اس کے برعکس پاکستان میں غریب کا کوئی پرسان حال نہیں۔ان خیالات کا اظہار اے کے ڈی گروپ کے چیئرمین اور معروف بزنس مین عقیل کریم ڈھیڈھی نے صحافیوں سے بات چیت کے دوران کیا ۔انہوں نے کہا کہ غریب کو سستے گھروں کا نعرہ دے کر ان کی عزت نفس مجروع نہ کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ آباد طویل عرصہ سے ’ ایفورڈیبل ہاؤسنگ’ کے لئے ہر فورم پر آواز بلند کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ لالچ نہیں بلکہ ایسا کار خیر ہے جس سے عام آدمی اپنی چھت تلے کرائے کے مسائل سے نکل کر اپنے اہل خانہ کی بہتر کفالت کرسکتا ہے۔ اے کے ڈی نے کہا کہ درآمدی اسٹیل تین سو پچاس ڈالر جبکہ مقامی اسٹیل اسی ہزار روپے میں فروخت ہورہا ہے جسے عام آدمی خریدنے کا تصور نہیں کرسکتا حکومت بالغ النظری کا مظاہرہ کرے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں جب بھی مشکل یا قدرتی آفات آئیں مخیر حضرات نے قدم آگے بڑھائے لیکن عام آدمی کے لئے حکومت نے کبھی نہیں سوچا۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے کارٹیلز کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے جبکہ مسابقتی کمیشن غیر فعال اور بے اثر ہے۔ عقیل کریم ڈھیڈھی نے کہا کہ پاکستان میں تعمیراتی شعبے میں استعمال ہونے والے گراں قیمت خام مال کے باعث ایفورڈیبل ہاؤسنگ ناممکن ہے۔ انہوں نے کہا کہ آباد اب عام آدمی کی آواز بن چکی ہے۔

، تعمیراتی شعبے کے لامتناعی مسائل کے حل کے لئے ملک بھر کا میڈیا آباد کے ساتھ ہے یہی وجہ ہے کہ حکومت نے بھی ان مسائل پر توجہ دی اور ان پر عمل درآمد نظر آرہا ہے لیکن حکومت کا بھی فرض ہے کہ مسائل کے حل کے ساتھ ساتھ ان پر فوری عمل درآمد کو یقینی بنائے۔ عقیل کریم ڈھیڈھی نے آباد کے پیٹرن انچیف محسن شیخانی کی انتھک کاوشوں سے تعمیراتی شعبے کے کئی مسائل حل ہوئے انہوں نے اپنی قائدانہ صلاحیتوں سے ایسی ٹیم تیار کی ہے جو ملک میں تعمیراتی انقلاب لانے کے ساتھ ساتھ ایک عام آدمی کے لئے اپنی چھت دینے کا مشن رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آباد کا مقصد اپنے ممبران کے ذاتی مسائل کا حل نہیں نہ ہی حکومت پر بلا جواز دباؤ ڈالا ہے بلکہ آباد حکومت کے شانہ بشانہ ملکی ترقی کے لئے کوشاں ہے۔ آباد کے رہنماؤں کی جانب سے پنجاب، کے پی کے اور بلوچستان کے ہر بڑے شہر میں جانے کے فیصلے کو خوش آئیند قرار دیتے ہوئے عقیل کریم ڈھیڈھی نے کہا کہ حکومت کو چاہیے کہ آباد کے اس مشن میں اس کا بھر پور ساتھ دے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں تعمیراتی شعبے کو اولین ترجیح دی جاتی ہے لیکن پاکستان میں عدم توجہی کے نتیجے میں تعمیراتی شعبہ جی ڈی پی پر صرف دو اعشاریہ پانچ کے ہندسے پر ہے۔ اگر حکومت توجہ مبذول کرے تو یہ شرح دگنی سے بھی آگے بڑھ سکتی ہے جس کا براہ راست فائدہ عام آدمی کا معیار زندگی بلند ہونے کے نتیجے میں آئے گا۔

مزید : کامرس