شاد باغ سے اغواء ہونے والی لڑ کی کو ننکانہ سے بازیاب

شاد باغ سے اغواء ہونے والی لڑ کی کو ننکانہ سے بازیاب

لاہور(کرائم رپورٹر)انوسٹی گیشن پولیس شاد باغ نے دو سال قبل اغواء ہونے والی 13 سالہ لڑ کی کو ننکانہ سے برآمد کرلیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سی سی پی او لاہورکیپٹن (ر) محمد امین وینس کی ہدایات کے تحت اغواء اور گمشدہ بچوں کی برآمد گی کیلئے کیے جانے والے کریک ڈاؤن اور سرچ آپریشن میں پولیس کی سپیشل ٹیمیں دن رات متحرک ہیں ۔انوسٹی گیشن پولیس شاد بناغ کے سب انسپکٹر محمد بشیر کو اطلاع ملی کہ ساجدہ نامی لڑکی جس کے اغواء کا مقدمہ تھانہ شاد باغ مین درج ہے وہ ننکانہ میں موجود ہے جس پر پولیس نے ریڈ کرکے لڑکی کو بازیاب کروا لیا دوران تفتیش اس بات کا انکشاف ہوا کہ لڑکی جو شاد باغ میں ایک شریف شہری عارف کے گھر ملازم تھی یہاں سے اچانک غائب ہو گئی اوراپنے والدین کے پاس چلی گئی جنہوں نے لاہور میں اس کے ا غواء مقدمہ درج کروا دیا اور بعد میں پیسے لیکر صلا ح کرلی اور اچانک لاہور سے غائب ہوگیا اور ننکانہ جا کر چھ مادہ بعد اسی ساجدہ نامی لڑکی کے ساتھ زبردستی ذیادتی کرنے کے جرم میں اپنے سگے بھتیجے مظفر کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا جس میں ملزم مظفر اشتہاری ہے جبکہ لاہور کا اغواء کامقدمہ بھی زیر تفتیش ہے پولیس نے لڑکی کو بازیاب کرلیا ہے

مزید : علاقائی