کشمیر کے بارے میں بانکی مون کا بیان ہماری سفارتی کامیابی ہے: پاکستان

کشمیر کے بارے میں بانکی مون کا بیان ہماری سفارتی کامیابی ہے: پاکستان

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک ،اے این این) اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون کی طرف سے مسئلہ کشمیر کے حل میں خدمات کی پیشکش کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر بارے بان کی مون کا بیان ہماری سفارتی کامیابی،بھارت مذاکرات کی میز پر آئے،سیکرٹری جنرل نے مقبوضہ کشمیر سے متعلق نواز شریف کے موقف کی حمایت اور بھارتی تشدد کی مذمت کی ہے ،عالمی برادری مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرائے اور بھارت کو مذاکرات کی میز پر لانے میں کردار ادا کرے۔نیویارک سے جاری اپنے ایک بیان میں ملیحہ لودھی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر بان کی مون کا بیان پاکستان کی سفارتی کامیابی ہے ۔ مسئلہ کشمیرعالمی سطح پر اجاگرہوگیاہے، بان کی مون نے وزیراعظم نواز شریف کے خط کے جواب میں کشمیریوں کی ہلاکتوں کی مذمت کی اور نواز شریف کے موقف کی حمایت کی ہے ۔بان کی مون نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی تشدد کی بھی مذمت کی ہے اور مسئلہ کشمیر کے حل میں اپنی خدمات کی پیشکش کی ہے ہم اس کا خیر مقدم کرتے ہیں ۔ملیحہ لودھی نے کہا کہ پاکستان نے بھی ایک بار پھر کشمیر کے حل کیلئے پرامن مذاکرات کی پیشکش کی ہے ، بھارت کو چاہیے کہ وہ اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق مذاکرات شروع کرے ۔ امریکا میں پاکستانی سفیر نے عالمی برادری سے اپیل کی ہے کہ وہ مسئلہ کشمیر میں تشدد ختم کرنے اور مذاکرات کی راہ اپنانے کیلئے بھارت پر دبا ؤڈالے ۔ ملیحہ لودھی کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیرمیں صورتحال بگڑتی جارہی ہے، اس صورتحال کا بھارت اور عالمی برادری کو بھی ادراک کرنا چاہیے ۔انھوں نے کہا کہ جب تک مسئلہ کشمیر حل نہیں ہوتا خطے میں پائیدار امن کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکتا۔

مزید : صفحہ آخر