دنیا کی وہ واحد جگہ جہاں پیار کرنے والوں کو شادی کرنے کی اجازت تو ہے لیکن ہنی مون منانے کی نہیں

دنیا کی وہ واحد جگہ جہاں پیار کرنے والوں کو شادی کرنے کی اجازت تو ہے لیکن ہنی ...
دنیا کی وہ واحد جگہ جہاں پیار کرنے والوں کو شادی کرنے کی اجازت تو ہے لیکن ہنی مون منانے کی نہیں

  

بوگوٹا(مانیٹرنگ ڈیسک) کولمبیا کی ایک بدنام زمانہ جیل نے اپنے 17قیدیوں کو اپنی گرل فرینڈز سے شادی کی اجازت تو دے دی ہے مگر ہنی مون پر جانے سے روک دیا ہے جس پر بیچارے قیدی انتہائی دل گرفتہ ہیں۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق کولمبیا کے شہر کیلی کی خطرناک کارسل ولا ہرموسا نامی جیل میں گزشتہ دنوں ان قیدیوں کی شادی کی تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تمام 17دلہنوں کے جیل کے کئی دروازوں سے گزار کر ایک بڑے ہال میں لیجایا گیا جہاں ان کے دولہے ان کا انتظار کر رہے تھے۔ منظرعام پر آنے والی تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ جیل میں آتے ہوئے ان دلہنوں نے عروسی ملبوسات زیب تن کر رکھے ہوتے ہیں۔

مزیدپڑھیں:’فحش فلم دیکھتے ہوئے اداکارہ کے چہرے کو غور سے دیکھا تو پیروں تلے زمین نکل گئی کیونکہ وہ میری۔۔۔‘ نوجوان نے ایسی بات کہہ دی کہ جان کر ایسے کام کرنے والا کوئی بھی شخص سوچ میں پڑجائے

اس تقریب میں 39سالہ قیدی اوسکر ایوان ہناﺅ نے اپنی 31سالہ دوست میگڈا گونزیلیز سے شادی کی۔ آسکر بھتہ لینے کے جرم میں 18ماہ قید کی سزا کاٹ رہا ہے۔ جب وہ جیل آیا تو اس کی گرل فرینڈ میگڈا امید سے تھی۔ اب جب وہ دلہن بن کر جیل میں آئی تو اس کی بانہوں نے 16دن کا بیٹا بھی تھا۔ آسکر نے اپنے بیٹے کو پہلی بار دیکھا تھا۔ آسکر کا کہنا ہے کہ ”میری خواہش ہے کہ اب جیل انتظامیہ باقی کی سزا پوری کرنے کے لیے مجھے میرے گھر میں ہی قید کردے تاکہ میں اپنے بیٹے اور بیوی کے ساتھ وقت گزار سکوں۔“رپورٹ کے مطابق جیل میں شادی کی یہ تقریب ایک فلاحی تنظیم نے منعقد کی ہے۔ جیل انتظامیہ کا کہنا تھا کہ ”ہمیں امید ہے کہ شادی کرکے ان مجرموں کے روئیے میں فرق آئے گا اور جب یہ رہا ہوں گے تو بہتر زندگی گزاریں گے۔“ واضح رہے کہ اس جیل میں 1500قیدیوں کی گنجائش ہے لیکن یہاں 6200قیدی رکھے گئے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس