روس نے ترکی سے امریکہ کی ایسی چیز مانگ لی کہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی راتوں کی نیندیں اُڑ گئیں،نیا خطرہ پیدا ہو گیا

روس نے ترکی سے امریکہ کی ایسی چیز مانگ لی کہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی ...
روس نے ترکی سے امریکہ کی ایسی چیز مانگ لی کہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی راتوں کی نیندیں اُڑ گئیں،نیا خطرہ پیدا ہو گیا

  

انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) تعلقات کی کشیدگی کم ہونے پر اب روس نے ترکی سے ایک ایسا مطالبہ کر دیا ہے جس نے امریکہ کے ہوش اڑا دیئے ہیں۔ ترکی کی انتہائی اہم ایئربیس ”انسرلیک“ امریکہ کے زیراستعمال تھی جو ناکام فوجی بغاوت کے بعد ترکی نے امریکہ سے خالی کروا لی ہے۔ اب روس نے یہ ایئربیس حاصل کرنے کے لیے ترکی پر دباﺅ بڑھانا شروع کر دیا ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق امریکہ کی تعمیر کردہ یہ ایئربیس شام کے بارڈر سے 65کلومیٹر دور واقع ہے اور اب تک نیٹو افواج کے زیراستعمال رہی ہے۔ اسی ایئربیس پر امریکہ کے لگ بھگ 50ایٹم بم بھی موجود رہے ہیں جو اب اس نے یہاں سے رومانیہ منتقل کر دیئے ہیں۔اس حوالے سے روس کے ایک سینئر سیاستدان کا کہنا تھا کہ ”اگر ترکی روس کو یہ ایئربیس استعمال کرنے کی اجازت دیتا ہے تو اس سے رجب طیب اردگان کی روس کے ساتھ تعلقات کو مضبوط کرنے کی کوششوں کو استقامت ملے گی۔“

رپورٹ کے مطابق روس کے سینیٹر وکٹر اوزروف کا کہنا تھا کہ ”ترکی انسرلیک ایئر بیس روسی فضائیہ کے حوالے کر دے تو اس سے شام میں جاری دہشت گردوں کے خلاف جنگ میں روسی افواج کو بہت مدد ملے گی اور دہشت گردی کا خاتمہ ممکن ہو سکے گا۔“ ان کی طرف سے یہ تجویز اس انکشاف کے ایک دن بعد سامنے آئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ روس شام میں بمباری کے لیے ایک ایرانی ایئربیس استعمال کر رہا ہے۔وکٹر اوزروف کا کہنا تھا کہ ”یہ بات غیرحتمی ہے کہ روس کو اس ایئربیس کی ضرورت ہے یا نہیں، تاہم اگر ترکی روس کو ایئربیس دیتا ہے تو اس سے یہ ثابت ہو گا کہ وہ روس کے ساتھ مل کر دہشت گردی کے خلاف لڑنا چاہتا ہے۔“

مزید : بین الاقوامی