بیٹر، فالکن کے غیر قانونی شکار کی روک تھام کیلئے خوصی ٹیمیں بنانے کا فیصلہ

بیٹر، فالکن کے غیر قانونی شکار کی روک تھام کیلئے خوصی ٹیمیں بنانے کا فیصلہ

 لاہور (سٹی رپورٹر)محکمہ تحفظ جنگلی حیات و پارکس پنجاب نے صوبہ بھر میں بٹیر کے غیر قانونی شکار اور فالکن کی نیٹنگ کی روک تھام کیلئے ریجنل افسران کو اپنے اپنے علاقوں میں اقدامات کرنے اور خصوصی ٹیمیں تشکیل دینے کی ہدایات جاری کرد ی ہیں ۔اس حوالے سے جاری مراسلے میں ڈائریکٹرجنرل وائلڈلائف اینڈ پارکس نے فیلڈ افسران اور اہلکاروں کو بٹیر کی قانونی نیٹنگ کی موثر نگرانی یقینی بنانے اور غیر قانونی شکار میں ملوث میں شکاریوں کیخلاف وائلڈلائف ایکٹ کے تحت سخت کارروائی کاحکم دیاہے ۔ مراسلے میں کہا گیا ہے حکومت پاکستان نے پنجاب میں 2006ء سے بحری ، چرگ او ر لگڑ سمیت فالکن کی تمام اقسام کی نیٹنگ اور برآمد پر پابندی عائد کررکھی ہے لہذا فیلڈ افسران اپنے علاقوں میں فالکن کی غیر قانونی نیٹنگ پر پابندی کے احکامات پر عملدرآمد ہرصورت یقینی بنائیں ۔ مزید براں محکمہ تحفظ جنگلی حیات کے مرکزی دفتر نے بٹیر اور فالکن کے غیر قانونی شکار کی روک تھام کیلئے صوبائی سطح پربھی ایک خصوصی ٹیم تشکیل دی ہے جو اچانک چھاپے مار کر اس حوالے سے کئے گئے اقدامات کا جائزہ لے گی اور احکامات پر عدم عملدرآمد اور غیرقانونی شکارکی شکایت پر متعلقہ افسران کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائے گی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1