عوام کے ساتھ مل کر ملک کو بہتری کی طرف لے جائیں گے، وفاقی وزیر خزانہ

عوام کے ساتھ مل کر ملک کو بہتری کی طرف لے جائیں گے، وفاقی وزیر خزانہ

کراچی(سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے منشور کے مطابق ملک کو آگے لیکر چلیں گے3سال سے ہم کہہ رہے تھے کہ معیشت کو ڈبویا جارہا ہے ۔ پیر کوکراچی ایئر پورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کے دوبڑے معاشی مسائل میں ایک نوجوانوں کوروزگارفراہم کرناہے عمران خان کے منشور کے مطابق ملک کو ترقی دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بیواؤں کی پنشن کا مسئلہ فوری حل کیا جائے گا۔ جو لوگ ٹیکس نہیں دیتے ان سے ٹیکس وصول کریں گے ایف بی آر کو بہتر بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ چاہتے ہیں کہ ادارے مضبوط ہوں عوام کا پیسہ عوام پر خرچ ہو، ملک کو باہر پڑا ہو ا پیسہ واپس لانا ترجیح ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئی ادارہ اپنی مزدوروں کی وجہ سے تباہ نہیں ہوا، عوام کے ساتھ مل کر ملک کو بہتری کی طرف لے جائیں گے۔وزیر خزانہ اسد عمر نے کہاہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کیلئے بانڈز جاری کرنے کا فیصلہ ابھی نہیں ہوا تاہم چند روز میں حتمی منظوری دیدی جائے گی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر نے کہا کہ سوئس بینکوں میں کتنی رقم پڑی ہے کوئی علم نہیں ٗ اسحاق ڈار نے چار سال پہلے بتایا تھا 200 ارب ڈالرز پڑے ہیں، دبئی میں پاکستانیوں کی 8 ارب ڈالرز کی جائیدادیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے منی لانڈرنگ کے ذریعے بھیجا گیا پیسہ واپس لانے کا حکم دیا ہے، حکومت کی پہلی ترجیح بیرون ملک سے پیسہ واپس لانا ہے۔وزیرخزانہ نے کہاکہ ملازمین کی وجہ سے پی آئی آئی اے اورسٹیل ملز تباہ نہیں ہوئی، پی آئی اے اور سٹیل ملز سے کسی کوبے روزگار نہیں کررہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ہاؤس میں 500 ملازمین ذاتی نوکری پر مامور تھے مگر اب یہ ملازمین عوام کی خدمات پرمامور ہوں گے۔

اسد عمر

مزید : صفحہ اول