چارسدہ ،بجلی کی لوڈشیڈنگ کیخلاف عوام سڑکوں پر آ گئے ،3معمولی زخمی

چارسدہ ،بجلی کی لوڈشیڈنگ کیخلاف عوام سڑکوں پر آ گئے ،3معمولی زخمی

چارسدہ (بیورو رپورٹ)بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف مشتغل مظاہرین کا فاروق اعظم چوک اور رجڑ میں مظاہرے ۔ دھکم پھیل کی وجہ سے تین مظاہرین معمولی زحمی ۔ مظاہرین کا واپڈا اور پولیس کے خلاف شدید نعرہ بازی ۔مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے مظاہرین پر اسلحہ تان لیا جس سے مظاہرین مزید مشتغل ہو گئے ۔ تفصیلات کے مطابق چارسدہ میں بجلی کی ناروا اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف رجڑ میں ناظم طارق باچا کی قیادت میں عوام نے زبر دست احتجاجی مظاہرہ کیا اور تنگی چارسدہ روڈ کو مکمل طور پر بند کیا ۔ ڈی ایس پی اختراز خان کی مداخلت پر مظاہرین نے احتجاج ختم کیا اور بعد ازاں ایکسین واپڈا سے مذاکرات کئے جس میں بجلی لوڈ شیڈنگ اور ٹریپنگ کے حوالے سے فریقین کے مابین ایک تحریری معاہدہ ہو ا ۔ دریں اثناء اہلیان ترناب نے فاروق اعظم چوک میں بجلی لوڈ شیڈنگ کے خلاف زبر دست احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ مشتغل مظاہرین نے واپڈا اور پولیس کے خلاف شدید نعرہ بازی کی ۔ ایم پی اے فضل شکور خان اوراے این پی کے ضلعی صدر قاسم علی خان محمد زئی بھی مظاہرین سے اظہار یکجہتی کیلئے پہنچ گئے ۔ ایم پی اے فضل شکور خان نے مظاہرین سے مذاکرات کرکے احتجاج ختم کر ایا اور ڈی ایس پی اختراز خان کی قیادت میں مظاہرین کے نمائندہ وفد نے ایکسین واپڈا سے مذاکرات کئے ۔ مذاکرات میں ایکسین واپڈا نے لوڈ شیڈنگ میں ریلیف کی یقین دہانی کرائی ۔ اس سے پہلے فاروق اعظم چوک میں مشتغل مظاہرین کو منتشر کر نے کیلئے پولیس نے اسلحہ تان لیا تو مظاہرین مزید مشتغل ہو گئے اور دھکم پیل میں تین افراد زحمی ہو گئے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر