مودی سرکار نے مسلمانوں کو گائے کی قربانی سے روک دیا

مودی سرکار نے مسلمانوں کو گائے کی قربانی سے روک دیا
مودی سرکار نے مسلمانوں کو گائے کی قربانی سے روک دیا

  

نئی دہلی(این این آئی)بھارت میں نریندر مودی سرکار نے مسلمانوں کے مقدس مذہبی تہوار عید الاضحیٰ پر کھلے مقامات پر قربانی پر پابندی عائد کرتے ہوئے گائے کی قربانی سے روک دیا جبکہ وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے قربانی پر پابندی کے اقدام کو مسلمانوں نے مذہبی آزادی پر حملہ قرار دیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست اتر پردیش کی حکومت نے عید الاضحیٰ پر کھلے مقامات پر قربانی پر مکمل پابندی عائد کرنے کا اعلان سامنے آیا ۔اس ضمن میں اترپردیش کے وزیراعلیٰ ادیتیہ یوگی ناتھ نے پولیس کو خصوصی ہدایت جاری کردی اور خلاف وزری کرنے پر گرفتاری کا حکم دیدیا۔ادیتیہ یوگی ناتھ نے مسلمان دشمن پالیسی اپناتے ہوئے متعلقہ حکام کو کہا کہ عیدالاضحی پر گائے کی قربانی پر مکمل پابندی ہوگی ٗدوسری جانب ڈپٹی وزیراعلیٰ نے ریاستی حکومت کے فیصلے کا خیر قدم کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ ادیتیہ یوگی ناتھ کے فیصلے کا مقصد تہوار کو ’پر امن‘ طریقے سے منانا مقصود ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی بھارت کی مختلف ریاستوں میں گائے کو ذبح کرنے پر پابندی عائد کی گئی تھی۔مدیحہ پردیش میں گائے ذبح کرنے پر ملزم کو 7 سال قید اور 5 ہزار روپے جرمانے کی سزا کا قانون رائج ہے، ریاست نے اس حوالے سے 2012 میں قانون میں ترمیم کی تھی۔

مزید : بین الاقوامی