باپ اپنے نوعمر لڑکے کے کمرے میں داخل ہوا تو ایسا شرمناک ترین منظر کہ ہوش اُڑگئے، فوری پولیس بلالی کیونکہ وہاں برہنہ حالت میں۔۔۔

باپ اپنے نوعمر لڑکے کے کمرے میں داخل ہوا تو ایسا شرمناک ترین منظر کہ ہوش ...
باپ اپنے نوعمر لڑکے کے کمرے میں داخل ہوا تو ایسا شرمناک ترین منظر کہ ہوش اُڑگئے، فوری پولیس بلالی کیونکہ وہاں برہنہ حالت میں۔۔۔

  

مانچسٹر(نیوز ڈیسک)مغربی ممالک میں خاندانی نظام اور رشتوں کا تقدس جس طرح پامال ہو چکا ہے اس کے بعد کیونکر توقع کی جا سکتی تھی کہ استاد اور شاگرد کے رشتے کا تقدس قائم رہ پاتا۔ اساتذہ اور شاگردوں کے درمیان غیر اخلاقی تعلقات کا ایک کے بعد کیس سامنے آتا جا رہا ہے اور تمام تر اقدامات کے باوجود یہ سلسلہ رکتا دکھائی نہیں دیتا۔ تازہ ترین واقعہ تو اس حوالے سے اور بھی شرمناک ہے کہ ایک باپ نے اپنے ہی گھر میں اپنے نوعمر بیٹے اور اس کی خاتون ٹیچر کو بے حیائی کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا ہے۔

ڈیلی سٹار کے مطابق 41سالہ ایریکا اوکسفلڈ نامی خاتون فورٹ زومواٹ ایسٹ ہائی سکول میں پی ٹی ٹیچر ہے۔ اس نے سکول میں زیر تعلیم 17سالہ لڑکے کے ساتھ بے حیائی کا تعلق استوار کر رکھا تھا اور اکثر اوقات لڑکے کے والدین کی عدم موجودگی میں اس کے گھر جا کر اس کے ساتھ وقت گزارتی تھی۔

لڑکے کے والد نے بتایا کہ چند روز قبل کی بات ہے جب وہ معمول سے ذرا پہلے گھر آ گیا اور سیدھا اپنے بیٹے کے کمرے کی جانب گیا۔ کمرے کا دروازہ کھولا تو ایک ایسا منظر اس کی آنکھوں کے سامنے تھا کہ جسے دیکھ کر وہ شرم سے پانی پانی ہو گیا۔اس کا نوعمر بیٹا اور اُس کی پی ٹی ٹیچر برہنہ حالت میں بیڈ پر بے حیائی میں مصروف تھے۔

لرزہ خیز منظر دیکھنے والے بدقسمت والد نے فوری طور پر پولیس کو اطلاع کر دی جس پر ٹیچر ایریکا کو گرفتار کر لیا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں سکول انتظامیہ سے بھی بات کی گئی ہے، تاہم پرنسپل کا مﺅقف ہے کہ سکول میں اس نوعیت کا واقعہ کبھی سامنے نہیں آیا۔ اُن کا مزید کہنا تھا کہ ایریکا کی بھرتی سے پہلے اس کے سابقہ ریکارڈ کی معلومات لی گئیں تھیں جس میں کوئی مشکوک بات سامنے نہیں آئی تھی۔ ملزمہ کے خلاف کم عمر فرد کے ساتھ جنسی تعلق کے الزام کے تحت قانونی کاروائی جاری ہے جبکہ دریں اثناءاسے ٹیچنگ کی ملازمت سے فارغ کر دیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس