ساحل سمندر پر مردہ دوست مچھلی، اس کا معائنہ کیا گیا تو منہ میں پھنسی کیا چیز موت کی وجہ بنی؟ جان کر تمام انسانوں کو شرم آجائے

ساحل سمندر پر مردہ دوست مچھلی، اس کا معائنہ کیا گیا تو منہ میں پھنسی کیا چیز ...
ساحل سمندر پر مردہ دوست مچھلی، اس کا معائنہ کیا گیا تو منہ میں پھنسی کیا چیز موت کی وجہ بنی؟ جان کر تمام انسانوں کو شرم آجائے

  

میکسیکو سٹی(نیوز ڈیسک) ہم انسانوں نے اس کرہ ارض پر اس قدر آلودگی پھیلائی ہے کہ اپنے لئے تو مصائب کھڑے کئے ہی ہیں ساتھ بے زبان جانوروں کو بھی لے ڈوبے ہیں۔ خشکی سے لے کر ہوا اور سمندروں تک ہماری پھیلائی ہوئی آلودگی تباہی برپا کر رہی ہے۔ ہر سال کروڑوں ٹن کچرہ سمندروں میں جاتا ہے جس کی وجہ سے آبی حیات سنگین ترین خطرے سے دوچار ہو گئی ہے۔ ہماری پھیلائی آلودگی سے سمندر کی مچھلیوں پر کیا بیت رہی ہے اس کی ایک انتہائی افسوسناک مثال میکسیکو کے ساحل پر دیکھنے میں آئی ہے۔ یہ ایک ڈولفن مچھلی ہے جو دم گھٹنے سے ہلاک ہوئی، اور اس بیچاری کے دم گھٹنے کا سبب ایک پیمپر بنا جو مرنے کے بعد بھی اس کے دانتوں میں پھنسا ہوا تھا۔

میل آن لائن کے مطابق جنوبی میکسیکو کے اوکساکا ساحل پر سیرکرنے والے کچھ سیاحوں نے اس ڈولفن کو دیکھا۔ یہ مردہ حالت میں ساحل کے کم گہرے پانی میں پڑی تھی اور اس کے دانتوں میں پھنسے ہوئے پیمپر کو ابھی بھی دیکھا جاسکتا تھا۔ آبی حیات کی دیکھ بھال کے لئے کام کرنے والے ادارے سان پیڈرو کلین بیچز کمیٹی کا کہنا تھا کہ ڈولفن کے جسم پر زخموں کے نشان بھی تھے اور اس کا ایک جبڑا بھی ٹوٹا ہوا تھا۔ ڈولفن کی لمبائی تقریباً سوا پانچ فٹ اور وزن تقریباً 100 کلوگرام بتایا گیا ہے۔ سمندری حیات کے ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ اس حوالے سے اور بھی تشویشناک ہے اور افسوسناک ہے کہ یہ نایاب نسل کی دھاری دھار ڈولفن تھی، جس کی نسل پہلے ہی معدومی کے خطرے سے دوچار ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس