پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث کالعدم تنظیم کے3دہشتگرد گرفتار

پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث کالعدم تنظیم کے3دہشتگرد گرفتار
 پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث کالعدم تنظیم کے3دہشتگرد گرفتار

  


کراچی(ڈیلی پاکستان آن  لائن)کاؤنٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ سندھ ( سی ٹی ڈی ) نے انٹیلی جنس معلومات پر کارروائی کرتے ہوئے پولیس کی ٹارگٹ کلنک اور فرقہ وارانہ دہشت گردی میں ملوث کالعدم لشکری جھنگوی سے تعلق رکھنے والے3دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا ہے۔ دہشت گرد پولیس اہلکاروں سمیت6افراد کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ہے۔

تفصیلات کے مطابق سی ٹی ڈی سول لائن میں پریس کانفرنس کے دوران انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب نے بتایا کہ کراچی میں پولیس اہلکاروں اور فرقہ وارانہ ٹارگٹ میں ملوث کالعدم لشکر جھنگوی سے تعلق رکھنے والے تین دہشت گردوں مر زا عمر فاروق بیگ عرف وود،سید ذبیح اللہ عرف طالبان اور فضل رازق عرف رازق کو گرفتار کیا ہے۔17جو ن2019ء کو 2 پولیس اہلکار اللہ ڈینو اور احمد علی کو تھانہ اور نگی ٹاؤن کی حدودمیں شہید کیاگیاتھا۔ پولیس کارروائیوں کے بعد دہشتگرد بلوچستان فرار ہو گئے تھے۔پولیس نے لیویز کے ساتھ معلومات کا تبادلہ کیا، 27جولائی 2019کو لیویز نے کارروائی کرتے ہوئے پنجگو کوئٹہ روڈ پر3دہشت گردوں ممتاز عرف فرعون ،ممنون عرف سمیر، حنزلہ عرف باولی کو ہلاک کردیا تھا جبکہ دیگر دہشت گرد بلوچستان کے علاقے میں روپوش ہوگئے، اس دوران سی ٹی ڈی سندھ کراچی نے اپنی معلومات کے نیٹ ورک پر کام جاری رکھا 20اگست کو اطلاع موصول ہوئی ہے کہ اس گروہ کے بچ جانے والے دیگر دہشت گرد حب بلوچستان کے راستے کراچی واپس آرہے ہیں دہشت گردوں کی گرفتاری کے لیے خفیہ ناکہ بندی کی اسی دوران تین دہشت گردوں کو پیدل حب ریور روڈ سے کراچی داخل ہوتے ہوئے گرفتار کرلیا۔ ملزمان سے تلاشی کے دوارن اسلحہ برآمد کیا ہے۔سی ٹی ڈی کو گرفتار ملزمان نے اپنے اعترافی بیان میں بتایا ہے کہ وہ شیخ ممتاز عرف فرعون کے ادھورے مشن کو مکمل کرنے کے لیے کراچی آرہے تھے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...