جنس تبدیل کرنے کی خواہش مند لڑکی لاہور ہائی کورٹ پہنچ گئی

  جنس تبدیل کرنے کی خواہش مند لڑکی لاہور ہائی کورٹ پہنچ گئی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لڑکی نے جنس تبدیل کروا کر لڑکا بننے کے لئے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا،عدالت نے چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری صحت سمیت دیگر مدعاعلیہان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 28 اگست تک جواب طلب کرلیاہے،مسٹر جسٹس جواد حسن صبا نامی لڑکی کی درخواست پرسماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے نعیم شہزاد ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزار سیالکوٹ میں چودھری محمد شریف کے گھر لڑکی کی حیثیت سے پیدا ہوئی، درخواست گزار کی عمر 30 برس ہے اور شروع سے ہی اس میں مردانہ خصوصیات ظاہر ہونا شروع ہوگئی تھیں،کافی عرصے سے خود کو مرد کے طور پر معاشرے میں اپنا تعارف کروا رہی ہوں،  ابتدائی طور پر زنانہ خصوصیات ختم کروانے کے آپریشن بھی کروایا، زنانہ خصوصیات کے باعث کافی پریشان ہوں، ایکسپرٹ ڈاکٹرز نے سائرہ میموریل ہسپتال ایم بلاک ماڈل ٹاؤن سے آپریشن کروانے کا مشورہ دیا، سائرہ میموریل ہسپتال ماڈل ٹاؤن سے جنسی تبدلی کی لئے آپریشن کروانے کے لئے رابطہ کیا، سائرہ میموریل ہسپتال ماڈل ٹاؤن کے ڈاکٹرز جنسی تبدیلی کے لئے آپریشن نہیں کررہے، ٹرانسجینڈر پرسنز ایکٹ 2018 ء کے تحت تبدیلی جنس کے لئے آپریشن کروانے کا قانونی حق رکھتی ہوں، سائرہ میموریل ہسپتال ماڈل ٹاؤن کے ڈاکٹرز کو جنس تبدیلی کے لئے آپریشن کرنے کا حکم دیا جائے۔

جنس تبدیلی

مزید :

صفحہ آخر -