حکومت کا منشیا ت سمگلرزکیخلاف ملک  بھر میں آپریشن شروع کر نے کا فیصلہ 

حکومت کا منشیا ت سمگلرزکیخلاف ملک  بھر میں آپریشن شروع کر نے کا فیصلہ 

  

  اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)وفاقی حکومت نے منشیا ت سمگلروں کیخلاف ملک بھر میں آپریشن شروع کر نے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک بھر میں منشیات فروشوں کیخلاف آپریشن انٹیلی جنس شیئرنگ پر ہوں گے۔ جمعرات کو وزارت انسداد منشیات میں اجلاس ہوا جس میں آئی جی سندھ، ایف سی، رینجرز اور کوسٹل کوڈ کے ڈی جیز بھی شریک ہوئے۔اس موقع پر فیصلہ کیا گیا کہ ملک بھر میں منشیات فروشوں کیخلاف آپریشن انٹیلی جنس شیئرنگ کی بنیاد پر ہوں گے جبکہ منشیات فروشوں کیخلاف آپریشن کیلئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے کوآرڈینیٹر بھی مقرر کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں وفاقی حکومت نے انسداد منشیات کے حوالے پراسیکیوٹرز کو بھی تبدیل کرنے فیصلہ کرتے ہوئے کہا کہ منشیات سمگلنگ روکنے اور منشیات فروشوں کے خلاف نئے قوانین متعارف کرائے جائیں گے۔ منشیات کے دھندے میں ملوث افراد کے خلاف آپریشن کا آغاز کراچی سے ہوگا جس میں رینجرز،ایف سی،کوسٹ گارڈز اور سندھ پولیس حصہ لے گی۔ گلی محلوں میں پولیس مڈل مین کی گرفت کے لئے رینجر بھی آپریشن میں حصہ لے گی۔اجلاس میں اعظم سواتی کی سربراہی میں بین الوزارتی کمیٹی تشکیل دیدی گئی جس میں وفاقی وزراء محمد میاں سومرو اور علی زیدی شامل ہیں۔کراچی میں حشیش، ہیروئن، آئس، مارفین جیسی منشیات فروشی کو گلی محلوں میں روکا جائے گا۔ اعظم سواتی نے کہاکہ وزیر اعظم کی ہدایت پر منشیات کی لعنت سے معاشرے کو پاک کریں گے، حکومت نے اب تک کروڑوں ڈالر کی منشیات پکڑ لی ہے، سمگلرز کو واضع پیغام ہے کہ منشیات کا کاروبار چھوڑ دیں۔

آپریشن 

مزید :

صفحہ اول -