صدر مملکت کی تقریر جھوٹ کا پلندہ، کرپشن کی داستانیں زبان زد عام ہیں: اپوزیشن 

صدر مملکت کی تقریر جھوٹ کا پلندہ، کرپشن کی داستانیں زبان زد عام ہیں: اپوزیشن 

  

 اسلام آباد (نیوزایجنسیاں) مسلم لیگ (ن)اور پیپلز پارٹی نے پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے پر شدید تحفظات کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ اجلاس بلانے کی ایمر جنسی کیا تھی،صدر مملکت کی تقریر جھوٹ کا پلندہ ہے،کرپشن کی داستانیں زبان زد عام ہیں،چینی کے ڈاکو ملک سے فرار کروا دئیے گئے ہیں،مہنگائی کو کنٹرول کرنے والے ایک کروڑ نوکریوں اور پچاس لاکھ گھروں والے کہاں گئے،اس سے بدترین حکومت شاید دنیا کے کسی ملک میں نہ آئی ہو،پاکستان بھیانک دور سے گزر رہا ہے، حکومت سے فوری چھٹکارا ضروری ہے، پاکستان کی اپوزیشن متحد ہے، بہت جلد ایک لائحہ عمل ہو گا۔ سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف، لیگی رہنما خواجہ محمد آصف و دیگر نے پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سیاسی جماعتوں کے ساتھ زیادتی ہورہی ہے، یہ ایک ایسا دور ہے جس سے جنتا جلد ہوسکے جان چھڑائی جائے۔راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پاکستان کا ہر شہری ان کو سمجھ چکا ہے اور انہیں افسوس ہے۔ سوشل میڈیا میں لوگ کہتے ہیں کہ میں نے پی ٹی آئی کو ووٹ دیا تھا لیکن میں شرمندہ ہوں۔علاوہ ازیں  جماعت اسلامی، جے یو آئی ف،پی کے میپ اور اور نیشنل پارٹی  پختونخوا کے ارکان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت داخلہ اورخارجہ محاذ پر ناکام ہو چکی ہے، ڈالر کی قیمت کم کرنے،بیروزگاری، مہنگائی اور غربت کے خاتمے سمیت وہ عوام کوکوئی سہولیات فراہم نہیں کر سکی۔ صدرعار ف علوی کے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کے بائیکاٹ کے بعد پریس کانفر نس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ نام نہاد صدر کی تقریر کے دوران ہم نے احتجاج ریکارڈ کرایا ہے موجودہ سلیکٹڈ حکمرانوں کو دوسال مکمل ہو گئے ہیں، ان کی تمام تر پالیسیاں ناکام رہیں۔ مولانافضل الرحمن نے 17جولائی 2018کو جو بیانیہ جاری کیا ہم اس پر کاربند رہے، لیکن بد قسمتی سے دو اپوزیشن پارٹیاں مصلحتوں کو کا شکار ہوئیں۔ سردار اختر مینگل کی علیحدگی کے بعد یہ سادہ اکثریت بھی کھو بیٹھے ہیں۔ کوئی،عقل دانش اور نا شرم حیا اور نا کوئی آئینی تقاضے ہیں۔آج یہ حکومت فضا میں کھڑی ہے اور ان کی کوئی عددی اکثریت نہیں ہے ہمارا ان جماعتوں پر کوئی اعتماد نہیں ہے۔پختونخواہ ملی پارٹی کے سربراہ سینیٹرعثمان کاکڑ نے کہا کہ ملک میں جو ظلم ہو رہا ہے صدر اس میں پوری طرح سے شریک ہیں ان کے ضمیر میں اخلاق اور اصول نہیں ہے۔ ہم نے عوام کو بتا دیا ہے کہ یہ صدر نا قابل برداشت ہیں۔ جماعت اسلامی کے رہنما سینیٹر مشتاق احمد نے کہاکہ یہ صدر اپنے عہدے کے بجائے پارٹی کی رہنمائی کر رہے ہیں۔

  اپوزیشن

مزید :

صفحہ اول -