پاکستان کے ہر دسوی شہری میں کورونا کیخلاف اینٹی باڈیز کی موجودگی کا انکشاف

  پاکستان کے ہر دسوی شہری میں کورونا کیخلاف اینٹی باڈیز کی موجودگی کا انکشاف

  

 اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان میں ہردسویں شہری میں کورونا کے خلاف اینٹی باڈیز کی موجودگی کا انکشاف سامنے آیاہے، مریضوں کے قریب رہنے والے افراد میں اینٹی باڈیز زیادہ پائی گئیں۔ نیشنل سیروپریویلنس اسٹڈی میں 11فیصد پاکستانیوں میں کورونا کے خلاف قوت مدافعت پیدا ہونے کا انکشاف ہوا۔وزارت صحت نے کہا ریسرچ ڈبلیوایچ او، اے کیومیڈیکل یونیورسٹی کے تعاون سے کی گئی جو25 ممالک میں ڈبلیوایچ اوکی یونٹی اسٹڈی کاحصہ تھی۔ ریسرچ میں شہریوں میں کورونااینٹی باڈیزکی شرح کوجانچاگیا۔تحقیق میں کہا گیا کہ 11فیصد پاکستانیوں میں کورونا کے خلاف قوت مدافعت پائی گئی، ہر دسویں شہری میں کورونا کے خلاف اینٹی باڈیز موجود ہیں۔ مریضوں کے قریب رہنے والے افراد میں اینٹی باڈیز زیادہ پائی گئیں جبکہ دیہاتوں کی نسبت شہروں میں کورونا اینٹی باڈیز کی شرح بلند ہے۔ کورونا اینٹی باڈیزکی شرح نوجوانوں میں بلند پائی گئی، بچوں اور بوڑھوں میں کورونا اینٹی باڈیز کی شرح کم پائی گئی۔تحقیق میں بتایا گیا کہ کورونا کی ممکنہ دوسری لہر بوڑھے افراد کیلئے خطرناک ہوسکتی ہے۔ مستقبل میں کم قوت مدافعت والے علاقے کورونا کیلئے ہائی رسک ہوسکتے ہیں۔وزارت صحت نے کہا کہ کورونا اینٹی باڈیز پرتحقیق کے نتائج فیصلہ سازی میں استعمال ہوں گے۔

 اینٹی باڈیز

مزید :

صفحہ آخر -