نااہلی کیس، فیصل واوڈا کو دوبارہ نوٹس جاری، جواب طلب 

نااہلی کیس، فیصل واوڈا کو دوبارہ نوٹس جاری، جواب طلب 

  

اسلام آبا د(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی وزیر فیصل واوڈا کو نااہلی کی درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔ جسٹس عامر فاورق نے وفاقی وزیر فیصل واوڈ کی نااہلی کے لیے میاں فیصل ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی جس میں فیصل واوڈا کی جانب سے کوئی وکیل عدالت میں پیش نہیں ہوا تاہم الیکشن کمیشن اور وفاق کی جانب سے نمائندے عدالت میں پیش ہوئے۔درخواست گزار کے وکیل جہانگیر جدون نے عدالت کو بتایا کہ 7 ماہ گزرنے کے باوجود فیصل واوڈا کی جانب سے جواب جمع نہیں کرایا گیا، یہ لوگ آئینی عدالت کو اتنا آسان کیوں لیتے ہیں؟ فیصل واوڈا کو ذاتی حیثیت میں طلب کیا جائے، اس پر جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ کیا اخبار میں اشتہار جاری کردیں؟ اس موقع پر الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا نااہلی کیس میں تحریری جواب عدالت میں جمع کرایا جس میں بتایا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن میں بھی فیصل واوڈا کی نااہلی کی درخواستیں زیر التوا ہیں، 2 جون کو فیصل واوڈا کے وکیل نے درخواستیں مسترد کرنے کی استدعا کی، فیصل واوڈا نے موقف اپنایا کہ الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت درخواستیں غیرمؤثر ہوچکی ہیں، الیکشن کمیشن نے درخواستوں پر فریقین سے جواب طلب کر رکھا ہے۔الیکشن کمیشن کے جواب میں بتایا گیا ہے کہ فیصل واوڈا کے خلاف نااہلی کیلئے سندھ ہائیکورٹ میں بھی درخواست زیرالتوا ہے۔بعد ازاں اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی وزیرفیصل واوڈا کو نااہلی کی درخواست پر دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے 17 ستمبر تک جواب طلب کرلیا۔

فیصل ووڈا

مزید :

صفحہ آخر -