گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کے زیر اہتمام کنونشن‘ ریلی‘ سینہ کوبی

  گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کے زیر اہتمام کنونشن‘ ریلی‘ سینہ کوبی

  

ملتان (سپیشل رپورٹر‘سٹاف رپورٹر ) تنخواہوں میں اضافہ کرنے اور دیگر مسائل کے حل ہونے تک تحریک جاری رکھی جائے گی۔وسائل کی منصفانہ تقسیم نہ کی گئی تو لاہور(بقیہ نمبر8صفحہ6پر)

 اور اسلام آباد کی سڑکوں پر دما دم مست قلندر ہوگا۔ان خیالات کا اظہار آل پنجاب گورنمنٹ ایمپلائز گرینڈ الائنس کے زیر اہتمام ہونے والے کنونشن اور احتجاجی ریلی میں کیا گیا۔کنونشن میں سینکڑوں ملازمین نے شرکت کی۔یہ کنونشن محکمہ انہار کے دفاتر میں ہوا۔بارش کی وجہ سے کنونشن کا آغاز تاخیر سے ہوا۔کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے خالد جاوید سنگھیڑا، حافظ عبدالناصر،پروفیسر ڈاکٹر طارق کلیم،رخسانہ انور،حافظ غلام محی الدین، ظفر علی خان،سید طاہر رضا شاہ،ملک محمد امجد،محمد اجمل شاد،غضنفر عباس شاہ، میاں طیب احمد بودلہ، بابا لطیف،اسلم معراج، اختر شاہین،مقصود احمد، رب نواز وٹو،محمد لطیف گل،رانا عبدالغفار ساجد اور دیگر مقررین نے کہا کہ شائد تاریخ میں پہلی مرتبہ ایسا ہوا ہے کہ خالی خزانہ کو جواز بنا کر سالانہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ طاقتور محکمہ جات کے الاؤنسز میں بے تحاشا اضافہ کیا گیا جن میں بیوروکریسی کے لئے ایگزیکٹو الاؤنس اور یوٹیلیٹی الاؤنس کی شرح میں بے تحاشا اضافہ،ایف آئی اے کی تنخواہوں میں اضافہ اورپولیس کے لئے بھی ایگزیکٹو الاؤنس کا اجراء، عدلیہ کے لئے یوٹیلیٹی الاؤنس کی شرح میں تین سو فیصد تک اضافہ،فوڈ اتھارٹی کے کنٹریکٹ ملازمین کے لئے الاؤنس شامل ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ مختلف محکمہ جات میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں تفاوت کا خاتمہ کیا جائے۔ایک ملک میں دو طرح کے نظام قابل قبول نہیں۔کنونشن کے بعد ضلع کونسل چوک تک احتجاجی ریلی نکالی گئی۔مظاہرین نے اپنے مطالبات کے حق میں پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے۔ اس موقع پر مظاہرین نے حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ریلی کے شرکاء نے "مر گئے بھکھے ہائے ہائے"،ساڈا حق ایتھے رکھ  اور آٹا چوروں اور چینی چوروں کے خلاف نعرے لگائے۔بعض مظاہرین نے گلے میں روٹی اور سبزیاں ڈال کر سینہ کوبی کی۔ 

ریلی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -