رکن اسمبلی اور محکمہ بلدیات کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے درمیان جھگڑا 

 رکن اسمبلی اور محکمہ بلدیات کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے درمیان جھگڑا 

  

مردان (بیورورپورٹ)تحریک انصاف کے رکن اسمبلی اور محکمہ بلدیات کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے درمیان پھڈا پڑگیا، اے ڈی نے رکن اسمبلی پر الزامات کی بوچھاڑ کرتے ہوئے اپنے تبادلے کے لئے اعلیٰ حکام کو خط ارسال کردیا جبکہ رکن اسمبلی نے الزامات کی تردید کرتے ہوئے مذکورہ آفیسر کے خلاف تحریک استحقاق جمع کرانے کا اعلان کیاہے اسٹنٹ ڈائریکٹر فضل اللہ نے اپنے تحریری چھٹی میں اعلیٰ حکام کو بتایاہے کہ وہ نوشہرہ میں بطور اے ڈی لوکل گورنمنٹ تعینات ہیں اورمردان کے اے ڈی کا اضافی ذمہ داریاں بھی ان کے پاس ہیں گذشتہ روز وہ دفتر میں موجود نہیں تھے کہ اس دوران دفتر کے پروگرام آفیسر محمد آیا زنے اطلاع دی کہ ایم پی اے عبدالسلام آفریدی،سابق ناظم ساجد اقبال مہمند اور افسر خان میڈیکل ٹیکنیشن ریسکیو ہری پور کے ہمراہ آئے اورمیری غیر موجودگی میں غلیظ زبان استعمال کی انہوں نے کہاکہ ایم پی اے مجھ پر حملہ کرناچاہتے تھے درخواست میں اعلیٰ حکام سے ان سے فوری طورپر اضافی چارج واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے اے ڈی لوکل گورنمنٹ نے کہاہے کہ ان کی ذاتی دشمنی کے باعث بھی ان کے لئے مذکورہ پوسٹ پر کام کرنا مشکل ہوگیاہے دریں اثناء تحریک انصاف کے صدر اوررکن صوبائی اسمبلی عبدالسلام آفرید ی نے اے ڈی بلدیات کی طرف سے لگائے گئے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہاہے کہ وہ مذکورہ آفیسر کے خلاف اسمبلی میں تحریک استحقاق جمع کرائیں گے خیبرپختون خوا ہاؤس میں اس واقعے پر غور کے لئے طلب کردہ اجلاس سے خطا ب کرتے ہوئے ایم پی اے عبدالسلام افریدی نے کہاکہ اے ڈی بلدیات کو بدھ کے روز بوقت گیارہ بجے ترقیاتی کاموں کے حوالے سے ملاقات خیبرپختون خوا ہاؤس مردان میں طلب کیاتھا ساڑھے گیارہ بجے تک انتظار کے باوجود اسسٹنٹ ڈائریکٹر میٹنگ میں نہ آئے اور انکا موبائل بھی مسلسل بند آرہا تھا تواس کے بعد وہ پارٹی کے جنرل سیکرٹری ساجد اقبال مہمند کے ہمراہ ان کے دفتر گئے لیکن وہاں پر وہ موجود نہیں تھے دفتری عملے نے جواب دیا کہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر آج پشاور میں ہیں انہوں نے اے ڈی کی طرف سے لگائے گئے الزاما ت کو من گھڑت کہانی قراردیتے ہوئے کہاکہ اس سے ان کی اوران کے ساتھیوں کی عزت نفس ہوئی ہے اوروہ اس کے خلاف اسمبلی فلور پر بھی آوازاٹھائیں گے اورعدالت سے بھی رجو ع کریں گے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے جنرل سیکرٹری ساجدا قبال مہمند نے مذکورہ اے ڈی لوکل گورنمنٹ پر کرپشن کے الزامات لگاتے ہوئے کہاہے کہ تمام ثبوت ان کے پاس ہیں اوروہ جلد ہی ا س کے خلاف نیب میں درخواست جمع کرائیں گے انہوں نے کہاکہ اجلاس میں فوری طورپر مذکورہ آفیسر کے تبادلے کرنے اور اوایس ڈی بنانے کا مطالبہ کیاگیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -