7کروڑ مزدورغربت کی لکیر سے نیچے زندگی بسرکررہے ہیں: مظہر جیلانی 

7کروڑ مزدورغربت کی لکیر سے نیچے زندگی بسرکررہے ہیں: مظہر جیلانی 

  

لاہور(فورم انٹرویو:دیبا مرزا)اسلامی رکشہ یو نین کے چیئرمین والخدمت پاکستان کے ایمبیسڈرحافظ مظہر جیلا نی نے کہا ہے کہ ہمارے ملک میں سات کروڑ کے لگ بھگ مزدور طبقہ غربت کی لکیر کے نیچے زندگی بسر کر رہا ہے جس میں سے صرف ایک کروڑرجسٹرڈ مزدور ہیں اورصرف لا ہور شہر میں 90ہزار رکشہ چل رہا ہے۔معاشرے کا سب سے کمزور طبقہ رکشہ ڈرائیور ہے۔بلاجواز چالان، پا سنگ کے مسائل،سوشل سیکو رٹی،اسٹینڈ و سٹا پ رجسٹریشن جیسے گھمبیر مسا ئل کا سامنا ہے۔اسلامی رکشہ یو نین کا سب سے پہلا مقصد اس طبقہ کو مضبو ط بنا نا ہے اور ان کے مسائل کو حل کرنا ہماری اولین ترجیح ہے۔ان خیالا ت کا اظہا ر انہو ں نے گز شتہ روز روزنا مہ ”پا کستان“ میں انٹرویو دیتے ہو ئے کیا۔انہو ں نے کہا کہ یہ ہماری یونین کا اعزاز ہے کہ اس نے رکشہ ڈرائیور کا چالان پانچ سو سے کم کر کے دو سو روپے کروایا کیونکہ رکشہ ڈرائیور ز کی اکثر شکایات موصول ہوئیں کہ ناجائز چالان کر کے پانچ سو روپے بہت زیادہ وصول ہو رہے ہیں جس کے بعد ہم نے اس مسئلہ کا حل نکالا اور اب دو سو روپے چلان کے مقرر ہوئے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ہم اپنی مدد آپ کے تحت ضرورت مندوں میں راشن تقسیم کرتے ہیں، بہت جلد میں رکشہ ڈرائیور کے تمام مسائل حل کروانے کے لئے اعلیٰ حکام سے بات کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ رکشہ ڈرائیور ہماری فیملی کی طرح ہیں ان کے بچے ہمارے اپنے بچوں کی طرح ہیں جن کی اچھی تعلیم،صحت پر کام کر یں گے جس کے باعث ایک رکشہ ڈرائیور کا بچہ رکشہ ڈرائیور نہیں اعلیٰ تعلیم یافتہ اور صحت مند شہری بن کر سامنے آئے۔انہوں نے کہا کہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ پورے ملک میں سات کروڑ مزدور کام کر رہے ہیں جبکہ رجسٹرڈ صرف ایک کروڑ کے قریب ہیں باقی ماندہ لوگوں کی رجسٹریشن بھی بہت ضروری ہے۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -